صحافت کا عالمی دن‘ ملتان سمیت مختلف شہروں میں مطالبات منظوری کیلئے مظاہرے

      صحافت کا عالمی دن‘ ملتان سمیت مختلف شہروں میں مطالبات منظوری کیلئے ...

  

ملتان (سٹی رپورٹر)پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس (پی ایف یو جے) کی میڈیا کی آزادی، صحافیوں کی جبری برطرفیوں، تنخواہوں کی عدم ادائیگی اور دیگر مسائل کے حل کے لئے جاری تحریک دوسرے مرحلیمیں (بقیہ نمبر47صفحہ6پر)

داخل ہوگئی ہے، اس سلسلہ میں گزشتہ روز 3 مئی کے موقع پر عالمی یوم آزادی صحافت کو ملک گیر یوم مطالبات کے طور پر منایا گیا۔ جس کے تحت اسلام آباد، لاہور، کراچی، کوئٹہ، حیدرآباد، پشاور، ایبٹ آباد، فیصل آباد، سکھر، بہاولپور، گوجرانوالہ، رحیم یارخان اور دیگر شہروں کی طرح ملتان میں بھی 10 نکاتی مطالبات کے حق میں بھرپور احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ ملتان یونین آف جرنلسٹس (ایم یو جے) کے زیر اہتمام ملتان پریس کلب کے سامنے کئے گئے احتجاجی مظاہرے کی قیادت پی ایف یو جے کی فیڈرل ایگزیکو کونسل کے ممبر روف مان، صدر ایم یو جے شکیل احمد بلوچ، جنرل سیکرٹری ایم یو جے شفقت بھٹہ اور فنانس سیکرٹری رانا عرفان الاسلام نے کی۔ مظاہرے میں ایم یو جے کے رہنماوں نائب صدر مظہر چودھری، نائب صدر شاہد سٹھو، جوائنٹ سیکرٹری محمود احمد چودھری، جوائنٹ سیکرٹری مجاہد سلطان، ممبران مجلس عاملہ بلال نیازی، احتشام الحق، رانا منور، شہزاد درانی، طارق انصاری، سینئر صحافیوں دلدار قریشی، نو بہار، عمران قریشی، زین العابدین، وسیم خان، ایاز شیخ، سرفراز احمد، زاہد عنبر، محمد عمران، سہیل جاوید، ریڈ ورکرز فرنٹ کے رہنماوں راول خان، ارتقاء قادر، جمیعت علماء اسلام ملتان رہنماوں علامہ ایاز الحق قاسمی، ضلعی نائب امیر علامہ ابو بکر عثمان، ضلعی سیکرٹری اطلاعات جمشید اجمل، پاکستان عوامی تحریک کے رہنماوں ضلعی جنرل سیکرٹری خلیل احمد آہیر، محمد سلمان، محمد زیشان، تاجر رہنماء ملک عمر کمبوہ، جسٹس اینڈ پیس کمیشن کے رہنماء ہائی سینٹ پیٹر، سنی نوجوان کونسل کے رہنماء عامر قادری، پاکستان پیرا میڈیکل سٹاف ایسوسی ایشن گورنمنٹ شہباز شریف ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ملتان کے صدر ملک عمران یوسف اور دیگر نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ احتجاجی مظاہرے میں حکومتی پالیسیوں اور میڈیا پر مختلف پابندیوں کے خلاف زبردست نعرے بازی کی۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے ممبر ایف ای سی روف مان کا کہنا تھا کہ آزادی رائے اور آزادی صحافت کے خلاف قوانین کو فوری طور پر ختم کیا جائے۔ حکومت میڈیا اور اخبارات کیملازمین کی ملازمت کے تحفظ کو یقینی بناتے ہوئے پریس پر اعلانیہ اور غیر اعلانیہ سنسر شپ کو ختم کرے۔ علاقائی صحافیوں کو مزید بے روزگار ہونے سے بچانے کے لئے علاقائی اخبارت کے لئے مختص اشتہارات کے 25 فیصد کوٹہ پر عمل درآمد کیا جائے۔ صدر ایم یو جے شکیل احمد بلوچ کا کہنا تھا کہ مختلف میڈیا ہاوسز سے برطرف کئے جانے والے صحافیوں اور میڈیا ورکروں کو فوری طور پر ملازمتوں پر بحال کر کیان کے تمام واجبات ادا کئے جائیں، ٹی وی چینل اور اخبارات کے نمائندوں کے لئے سروس سٹرکچر بنایا جائے تاکہ ان کو قانونی تحفظ حاصل ہو۔ جنرل سیکرٹری ایم یو جے شفقت بھٹہ نے کہا کہ میڈیا ہاوسز کے بقایاجات کی ادائیگی کو صحافیوں اور دیگر میڈیا کارکنوں کی واجب الادا تنخواہوں اور دیگر بقایاجات کی پیشگی ادائیگی اور جبری ڈاؤن سائزنگ کو روکنے سے مشروط کیا جائے، حکومت صحافی کارکنوں کے لئے بھی کرونا وائرس سے بیمار یا شہید ہونے کی صورت میں 10 لاکھ روپے کے امدادی پیکج اور پریس کلبز اور یونینز کے دفاتر کو بندش سے بچانے کے لئے بیل آؤٹ پیکج کا اعلان کرے۔ ایم یو جے کے فنانس سیکرٹری رانا عرفان الاسلام نے کہا کہ ملک کی دیگر صنعتوں کی طرح میڈیا مالکان کو بھی برطرفیوں، تنخواہوں میں کٹوتیوں اور تنخواہوں کی عدم ادائیگیوں میں سختی سے باز رکھا جائے اور غیر اعلانیہ سنسرشپ اور اشتہارات کو آزادی صحافت کے خلاف بطور سرکاری ہتھیار استعمال کرنے کی پالیسی ختم کی جائے کیونکہ آزادی صحافت کو ملک کا ہر صحافی اپنی جان سے زیادہ عزیز سمجھتا ہے۔ مقررین کا کہنا تھا کہ جب تک حکومت مطالبات تسلیم نہیں کرتی تحریک جاری رہے گی۔

مظاہرے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -