کرونا وائرس سے نجات سے کیلئے پوری قوم توبہ استغفار کرے‘ قاری حنیف جالندھری

  کرونا وائرس سے نجات سے کیلئے پوری قوم توبہ استغفار کرے‘ قاری حنیف جالندھری

  

ملتان (سٹی رپورٹر) پر مولانا قاری حنیف جالندھری سیکرٹری جنرل وفاق المدارس،ممبر اسلامک نظریاتی کونسل آف پاکستان نے کہا کہ کروناوائرس کی عالمی وباء کی وجہ سے پاکستان اور دنیا کے اکثر ممالک کی معیشت بہت بری طرح متاثرہوئی ہے اور جو معاشی بحران ہے وہ اس کرونا وائرس سے بھی بڑا بحران ہے وزیراعظم عمران خان نے کہا تھاکہ پاکستان ایک ترقی پذیر اور غریب ملک ہے اس لیے یہ زیادہ سخت اور لمبے عرصے کے لیے لاک ڈاؤ ن کا متحمل نہیں (بقیہ نمبر25صفحہ6پر)

ہو سکتا میں یہ سمجھتاہوں کہ ان کی یہ بات بالکل درست ہے جس طرح پاکستان معاشی اعتبار سے سخت اور لمبے عرصے تک لاک ڈاؤ ن کا متحمل نہیں ہو سکتا، اسی طرح مذہبی اور دینی اعتبار سے بھی سخت اور لمبے عرصے کے لیے لاک ڈاؤ ن کا متحمل نہیں ہو سکتا،اس لیے کہ پاکستان دنیا کا منفردوہ ملک ہے جو اسلام کے نام پر بنا ہے یہاں جولوگوں کی اسلام سے اور دین سے وابستگی ہے وہ الحمدللہ روز روشن کی طرح واضح ہے اور پوری دنیاسے زیادہ ہے اس لیے یہاں کی مساجد کو کھولنااور یہاں لوگوں کو عبادات کی اجازت دینامیں سمجھتا ہوں کہ بہت ضروری ہے پوری قوم اجتماعی طور پر توبہ کرئے استغفار کرئے اوراللہ سے اپنے گناہوں کی معافی مانگے اور رمضان کا یہ مقدس اور مبارک مہینے ہے اس میں ہم زیادہ سے زیادہ اپنی مساجد کو آباد کریں اوریہ جو ایس او پیز بنائی گئیں ہیں اس پر مساجد پر تو عمل ہو رہا ہے مگردیگر مارکیٹوں میں اس پر عمل نہیں ہو رہا ہے یہ حفاظتی اور احتیاطی تدابیر جو ہیں اس کی آڑمیں مساجد کو جو نشانہ بنایا جاتا ہے اس طرح کی کسی کوشش کو ہم انشااللہ کامیاب نہیں ہونے دیں گئے۔مزید کہا کہ یہ جو کرونا وائرس کی وبا اورلاک ڈاؤن ہے اس پر اب بہت سے سوالیہ نشان اٹھ رہے ہیں یہ کوئی سازش ہے یا کوئی منصوبہ ہے خود امریکہ میں لوگ سٹرکوں پر آگئے ہیں اور وہ اب اس کے خلاف آواز اٹھا رہے ہیں اس کی پوری طرح انکوائری ہونی چاہیے۔حکومت کو اب اس طر ف توجہ دینی چاہیے کہ اس بحران نے ہماری بہت سی خامیوں کی نشاندہی کردی ہے ہمارے پاس وینٹی لیٹر نہیں ہیں ہماری پاس صحت کی ضروری چیزیں نہیں ہیں اور ہمارے پاس ماسک تک نہیں ہیں وہ ہم دوسرے ملکوں سے منگوا رہے ہیں ہمیں اس طرف توجہ دینی چاہیے اورمیڈیکل سائنس سے وابسطہ لوگوں اوراداروں کو اس پر محنت کرنی چاہیے کہ ریسرچ کریں کہ اس کی دوائی تیار کریں،علاج دریافت کریں ویکسین تیار کریں۔افطار ڈنر میں حاجی رانا فاروق،حاجی منشاء،راؤ صادق، رانا تسلیم، راؤ ذیشان، راؤ عرفان، راؤ طلحہ، راؤ عمران، راؤ نعمان، رانا سہیل، رانا کاشف ودیگر نے شرکت کی۔

حنیف جالندھری

مزید :

ملتان صفحہ آخر -