12کروڑ واپس‘ ماڈل منڈی مویشیاں ملتان کا منصوبہ متاثر ہونیکا خدشہ

  12کروڑ واپس‘ ماڈل منڈی مویشیاں ملتان کا منصوبہ متاثر ہونیکا خدشہ

  

ملتان (سپیشل رپورٹر) ڈپٹی ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ ملتان و ڈپٹی کمشنر کی غفلت کے باعث پنجاب حکومت نے ماڈل کیٹل منڈی کیلئے فراہم کئے جانیوالے 120ملین روپے کے فنڈز واپس لے لئے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ ڈپٹی ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ وقار الحسن اور ڈپٹی کمشنر ملتان عبدالعامر خٹک کی کیٹل مارکیٹ مینجمنٹ کمپنی کی انتظامیہ اور بلڈنگز ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ(بقیہ نمبر27صفحہ6پر)

کی طرف سے متعدد بار مراسلہ جاری ہونے کے باوجود کہ بلڈنگ ڈیپارٹمنٹ کو 120ملین روپے کے فنڈز جاری کئے جائیں تاکہ ماڈل کیٹل مارکیٹ ملتان کا کام جاری رکھا جا سکے،  لیکن آفیسران کی عدم دلچسپی کے باعث فنڈز بلڈنگ ڈیپارٹمنٹ کو جاری نہیں  کئے جا سکے ہیں، اب پنجاب حکومت نے مذکورہ فنڈز واپس لے لئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق منڈی مویشیاں جسونت گڑھ کی زمین کی خریداری میں کیٹل مارکیٹ مینجمنٹ کمپنی کی جانب سے 12کروڑ روپے خر چ کئے گئے تھے، لیکن مذکورہ آفیسران نے 12کروڑ روپے بھی کمپنی کے اکاونٹ میں ٹرانسفر نہیں کئے ہیں۔خدشہ ہے کہ ملک میں کورونا وائرس کی وجہ سے آئندہ سال حکومت کی جانب سے مذکورہ فنڈز جاری نہ کئے جا سکیں،جس کی وجہ سے ماڈل منڈی مویشیاں  جسونت گڑھ میں  ترقیاتی کام میں تعطل پیدا ہو جائے جس سے تخمینہ لاگت بھی بڑھنے کا خدشہ ہے، مذکورہ آفیسران کی وجہ سے ماڈل مارکیٹ کی تعمیر تاخیر کا شکار ہو رہی ہے اس کیساتھ ساتھ منڈی میں آنے والے لوگوں کے مسائل میں بھی اضافہ مسلسل اضافہ ہورہا ہے جس کے باعث ٹھیکہ داروں سے قسطوں کے حصول میں  کمی کا امکان ہے، آڑھتی محمد ندیم شاہ، محمد آصف، کامران نے کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان ترقیاتی سکیمیں میں رکاروٹ اور نقصان کا باعث بننے والے آفیسران کے خلاف کاروائی کریں۔

خدشہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -