حکومت کے نامناسب فیصلے سے بازاروں میں رش بڑھ گیا،مجیب الرحمن

حکومت کے نامناسب فیصلے سے بازاروں میں رش بڑھ گیا،مجیب الرحمن

  

پشاور(سٹی رپورٹر) تاجر اتحاد خیبر پختونخو اکے صدر مجیب الرحمن نے کہاہے کہ حکومت کے نامناسب فیصلے کی وجہ سے بازاروں میں خریداروں کا رش معمول سے کئی گنا زیادہ ہوگیا ہے، ء جس کے نتیجے میں کورونا سے بچاو کے لئے نافذ ضابطہ اخلاق غیر موثر ہوکے رہ گیا ہے۔صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 8مئی سے 16مئی تک بازاروں اور مارکیٹوں کی بندش  کے فیصلے کا کوئی جواز نہیں بنتا۔حکومت حالات کو تصادم کی طرف لے جارہی ہے۔تاجر برادری ؎طویل لاک ڈاون کو مسترد کرتی ہے۔حکومت  نے قبل از وقت لاک ڈاون کا اعلان کر کے عوام میں تشویش کی لہر دوڑادی ہے۔حکومت حالات کو نارمل کرنے کے لئے لاک ڈاون کے فیصلے کو واپس لے۔انہوں نے کہا کہ حکومتی فیصلے کی وجہ سے آج بازاروں میں لوگوں کے بھیڑ  میں اضافہ ہوگیا ہے، عوام لاک ڈاون کے اعلان سے خوفزدہ ہو کر مارکیٹوں کا رک کر رہے ہیں۔ناقص حکمت عملی نے عوام اور تاجروں  کی جانوں کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔مجیب الرحمن نے کہا کہ حکومت ایک دفعہ پھر تاجروں کو مورد  الزام ٹھہرا کر فرار ہوجائیگی،تاجر برادری کب تک حکومت کی نااہلی کا بوجھ اٹھائینگے۔مجیب الرحمن نے مزید کہا کہ حکومت ڈرامے بازیاں اور رنگ بازیاں بند کریاور تاجروں کے ساتھ مل  کر عید شاپنگ کی منصوبہ بندی کرے۔ مجیب الرحمن نے دوٹوک انداز میں کہا کہ تاجر برادری کاروبار بند کرنے کا متحمل نہیں ہوسکتے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -