حکومت ایس او پیز کے تحت بازاروں کو رمضان کے آخری عشرہ تک کھولنے کی اجازے دے: شیر باز بلور

    حکومت ایس او پیز کے تحت بازاروں کو رمضان کے آخری عشرہ تک کھولنے کی اجازے ...

  

 پشاور(سٹی رپورٹر)سرحد چیمبر آف کامرس اینڈاینڈسٹری نے تاجروں کی جانب سے 8 مئی سے صوبہ بھر میں مکمل لاک ڈاؤن کے حکومتی فیصلہ کی مخالفت کی بھرپور حمایت کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ کورونا وائرس سے متاثرہ کاروباری اور تجارتی سرگرمیاں مزید کسی بندش کی متحمل نہیں ہوسکتی ہے۔ حکومت اپنے فیصلہ پر فوری نظرثانی کرکے سخت ایس او پیز کے تحت بازاروں اور کاروباری مراکز کو رمضان کے آخری عشرہ کھلا رکھنے کی اجازت دی جائے۔ سرحد چیمبر کے صدر شیر باز بلور نے گذشتہ روز ایک بیان میں کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے 8 سے 16 مئی تک مکمل لاک ڈاؤن کے نافذ ملکی معیشت اور کاروبار کو داؤ پر لگانے کے مترادف قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ کورونا وائرس سے متاثرہ کاروبار ابھی مکمل طورپر بحال نہیں ہوا ہے کہ دوبارہ سمارٹ لاک ڈاؤن اور مکمل لاک ڈاؤن لگایا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ تاجروں کی جانب سے حکومتی فیصلہ کی مخالفت پر ان کی مکمل حمایت کرتے ہیں اور حکومت وقت سے پرزور مطالبہ کرتے ہیں کہ تاجروں کے معاشی قتل کا سلسلہ فوری طور پر بند کیا جائے حکومتی پالیسیوں کے نتیجے میں پہلے ہی معیشت کا پہیہ مکمل طورپر رک گیا ہے اور کاروبار‘صنعتیں‘ تاجر برادری شدید مشکلات سے دوچار ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس سے متاثرہ تاجر برادری کو ریلیف دینے کی بجائے بزنس کش پالیسیوں کا نافذ قابل مذمت ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ رمضان کے آخری اور عید کی آمد کے موقع پر بازار اور مارکیٹس بند کرنے کا کوئی جواز نہیں حکومت فوری طور پرمتعلقہ نوٹیفیکیشن واپس لیں۔ بصورت دیگر تاجر برادری سخت احتجاج پر مجبور ہوگی۔ انہوں نے مزید کہاکہ حکومت نے ہوش کے ناخن نہ لیے تو پھر دما دم مست قلندر ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ بازاروں اور مارکیٹس کو سخت ایس او پیز کے تحت کھلارکھنے کی اجازت دی جائے۔ انہوں نے کہاکہ حکومت تاجروں کے معاشی مسائل کا ادراک کرتے ہوئے سہولیات فراہم کریں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -