ملتان، ڈیرہ رحیم یار خان: کرونا حملے میں مزید 9افراد جاں بحق، متعدد کی حالت نازک 

ملتان، ڈیرہ رحیم یار خان: کرونا حملے میں مزید 9افراد جاں بحق، متعدد کی حالت ...

  

 ملتان، ڈیرہ، بہاولپور، رحیم یارخان، خانیوال(وقائع نگار، سٹی رپورٹر، بیورو رپورٹ، ڈسٹرکٹ رپورٹر، نمائندہ پاکستان) نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا 04 مزید مریض جاں بحق،اموات کی مجموعی تعداد 665 ہو گئی ز، نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملتان کے 40 سالہ غلام نبی 64 سالہ فرزانہ بی بی 45 سالہ محمد شوکت اور خانیوال کے(بقیہ نمبر27صفحہ6پر)

 50 سالہ محمد مراد نے دم توڑ دیا،یوں یکم اپریل 2020 سے تین مئی 2021 کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 665 ہو گئی ہے،جبکہ نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 112 ہو گئی ہے جن میں سے 66 مریضوں کا تعلق ملتان سے ہے جبکہ زیر علاج 24 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے،جبکہ کورونا کے شبہ میں 51 مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار ہے،ادھر رواں سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 5 ہزار 714 افراد رپورٹ ہوئے جن میں سے 2 ہزار 202 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے،ادھر نشتر ہسپتال کا کورونا آئی سو لیشن وارڈ مریضوں سے بھر گیا ہے جہاں اس وقت 241 مریض زیر علاج ہیں جبکہ 82 وینٹی لیٹرز میں سے صرف 05 خالی رہ گئے ہیں۔ڈیرہ غازیخان میں گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران کرونا کے باعث ایک خاتون سمیت چار مریض موت کے منہ میں چلے گئے جبکہ 15مزید نئے مریضوں کی رپورٹ مثبت آگئی اس سلسلہ میں میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ ہسپتال ڈاکٹر اطہر فاروق نے بتایا کہ ڈسٹرکٹ ہسپتال میں اس وقت کل 35مریض زیر علاج ہیں جن میں 8مریض وینٹی لیٹرز پر ہیں اور پانچ کروناکے مریضوں کی حالت انتہائی تشویشناک ہے انہوں نے بتایا کہ کرونا کے باعث جاں بحق ہو نے والوں میں بلاک 45کے 47سالہ محمداسحاق،داجل کے 70سالہ محمد منیر،بلاک 18ڈی جی خان کی 60سالہ شاہدہ بی بی اور چٹ ڈگر ڈی جی خان کے 60سالہ غلام عباس شامل ہیں ڈاکٹر اطہر فاروق نے بتایا کہ ڈسٹرکٹ ہسپتال میں آکسیجن کی کوئی قلت نہیں ہے اور آکسیجن فراہمی کے لئے موثر اور ٹھوس اقدامات عمل میں لائے گئے ہیں۔کورونا وائرس میں مبتلا 77 سالہ شخص ہسپتال میں دم توڑ گیا کورونا وائرس کے شبہ میں مزید 17 افراد ہسپتال منتقل تصدیق کیلئے نمونہ جات لیبارٹری روانہ قرنطینہ سینٹر منتقل۔تفصیل کے مطابق خانپور کے رہائشی 77 سالہ محمد یعقوب کو کورونا وائرس کے شبہ میں ورثا نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود وہ جانبر نہ ہو پایا اور دم توڑ گیا انتظامیہ نے کورونا ایس او پیز کے تحت آبائی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا جبکہ کورونا وائرس کا شبہ میں مزید 17 افراد جناح پارک کی 22 سالہ جویریہ بی بی ظاہر پیر کا 21 سالہ محمد شفیق کینال گارڈن کا محمد ارشد گلشن اقبال کا 64 سالہ حاجی جعفرخانپور کا 53 سالہ ارشد جناح پارک کا 27 سالہ زکریاجناح پارک کا 90 سالہ غلام محمد حافظ کالونی کا 38 سالہ ذوالفقار علی کوٹ مٹھن 60 سالہ عبید اختر علامہ اقبال ٹان کا 28 سالہ محمد اشفاق گلشن اقبال کا 67 سالہ عبدالرزاق شیخ واہن کا 35 سالہ صلاح الدینپلو شاہ کا 38 سالہ شوکت حسین سٹیلائیٹ ٹان کا 53 سالہ فیصل بشیرموضع پلو شاہ کا 56 سالہ ممتاز احمد چک 164 کی 70 رستی مائی کو ہسپتال میں طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں تصدیق کیلئے نمونہ جات لیبارٹری روانہ کرتے ہوئے قرنطینہ سینٹر منتقل کر دیا۔ محکمہ ہیلتھ کی طرف سے دیے گئے اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ روز بھی تقریبا8 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئیسرکاری اعداد و شمار کے مطابق جاری کردہ کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کے نام بالترتیب کچھ یوں ہے۔انیلاخانمحمدندیماصف علیمحمد جاویدغلام یسینمحمدندیمزاہد حسین اور فریاد علی کوورثا کی جانب سے شیخ زید ہسپتال لایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے متاثرہ مریضوں کے سوائپ حاصل کرنے کے بعد ان میں وائرس کی تصدیق کردی۔ محکمہ صحت اور ضلعی انتظامیہ نے متاثرہ مریضوں کو ایس او پیز کے تحت گھروں میں ایسو لیٹ کر دیا۔ گزشتہ روز محکمہ صحت سے جاری ہونے والے اعداد و شمار کے مطابق ضلع رحیم یار خان میں کورونا وائرس کے ایکٹو کیسز کی تعداد 765 مجموعی تعداد4383جبکہ اموات کی تعداد 168تک جا پہنچی اور صحت یاب ہونے والے3450ہیں۔5 افراد کو شیخ زید ہسپتال میں کورونا آئی سی یو وارڈ 5آر وائی کے ہسپتال میں ہیں 21 افراد شیخ زید ہسپتال پی پی بلاک میں زیرعلاج ہیں جبکہ765افراد کو ایس او پیز کے تحت ہوم ایسو لیٹ کر دیا گیا۔ محکمہ ایکسائز کے دفترمیں کروناوائرس کے تابڑتوڑ حملے نیورجسٹریشن برانچ میں یکے بعددیگرے تین ملازمین کروناوائرس کاشکارہوگئے افسران کی عدم توجہی کے باعث پوری برانچ میں خوف وہراس پھیل گیاتفصیل کے مطابق محکمہ ایکسائز کے دفترمیں نیورجسٹریشن برانچ میں انسپکٹرمحمدایوب بلوچ کروناوائرس کاشکارہوا20 دن قرنطینہ رہنے کے واپس آیاتو اسی برانچ کاڈیٹاانٹری کلرک محمدارسلان کروناکاشکارہوگیااسے ہسپتال بھجوایاگیا توتین روز بعدتیسرے جونیئر کلرک ذیشاد کی طیبعت بگڑ گئی اسے بھی کروناہسپتال بھجوایاگیا افسران کی عدم توجہی پرایکسائز آفس کے ملازمین میں تشویش کی لہردوڑ گئی ہے اورانہوں نے فوری طورحفاظتی اقدامات کرنے کامطالبہ کیاہے۔  محکمہ جنگلات کمپلیکس بہاول پورمیں کروناکے پیش نظر حکومتی ہدایات کومسلسل نظرانداز کرنے کی وجہ سے ایک خاتون سرکاری ملازم میں کروناٹیسٹ مثبت آگیا جس پرخاتون ملازم پندرہ روز کے لئے اپنے قرنطینہ میں چلی گئی دفتری زرائع کے مطابق سعیدتبسم ناظم جنگلات کی جانب سے کرونا کے پیش نظرحکومت ہدایات کومسلسل نظرانداز کیاجارہاہے جبکہ اعلی حکام کوسب اچھا کی رپورٹ دی جارہی ہے زرائع نے مزیدبتایا کہ جنگلات کمپلیکس کے مختلف دفاتر میں سٹاف بغیرحفاظتی اقدامات کے کام کرنے پرمجبور ہیں جبکہ مردانہ سٹاف کی موجودگی کے باوجود لیڈیز سٹاف سے دفتری اوقات کے بعدرات گئے دیرتک سرکاری کاموں کے لئے پابندرکھنے کاسلسلہ بدستورجاری ہے اوردفتری اوقات کے بعدکام نہ کرنے کی صورت میں محکمہ کاروائی کرنے کاکہاجاتاہے شہریوں نے جنگلات کمپلیکس میں جاری تشویش ناک صورتحال کافوری نوٹس لینے اوروزیراعلی پنجاب سے ناظم جنگلات سعیدتبسم کے خلاف فوری کاروائی کرنے کامطالبہ کیا کووڈ19کی تیسری لہرکے پیش نظرپنجاب بھرمیں ڈرائیونگ لائسنسوں کے اجرا پردوماہ کے لئے پابندی لگادی گئی۔ہیڈآف ٹریفک پولیس پنجاب کے حکم پرایس ایس پی ہیڈکوارٹرزڈاکٹربشیرجمیل کے دستخطوں سے پنجاب بھرکے چیف ٹریفک افسروں کے نام جاری کئے گئے مراسلے میں کہاگیاہے کہ صوبہ میں کووڈ19کی حالیہ و باکے پیش نظر ہرقسم کے ڈرائیونگ لائسنس کے پروسیچرٹریننگ، ٹیسٹنگ،اجرا اورتجدید پرفوری طور دوماہ کیلئے پابندی عائدکردی گئی ہے۔

کرونا وائرس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -