وزیر اعلیٰ سندھ سے صوبے کے ڈاکٹرز کی ملاقات،کورونا صورتحال پر تبادلہ خیال

وزیر اعلیٰ سندھ سے صوبے کے ڈاکٹرز کی ملاقات،کورونا صورتحال پر تبادلہ خیال
وزیر اعلیٰ سندھ سے صوبے کے ڈاکٹرز کی ملاقات،کورونا صورتحال پر تبادلہ خیال

  

کراچی ( ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے صوبے کے ڈاکٹرز وزیر صحت ،و زیر بلدیاتی ، مشیر قانون ، چیف سیکرٹری ، سیکرٹری صحت ، ڈاکٹر باری ، ڈایکٹر فیصل اور دیگر نے ملاقات کی ، ملاقات میں صوبے میں کورونا کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔

اس موقع پر وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ ہمیں ہر حال میں رضا کارانہ طور پر ایک دوسرے کا خیال رکھنا ہے ، ہم کراچی شرقی ، جنوبی اور حیدر آباد میں سخت اقدامات کر رہے ہیں ۔ 

ڈاکٹر قیصر نے وزیر اعلیٰ سندھ کے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ ٹرانسپورٹ پر پابندی اچھا اقدام ہے ،افسوس کی بات ہے کورونا پر سیاست ہو رہی ہے ۔ 

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق سید مراد علی شاہ نے کہا کہ ایس او پیز پر مزید عملدرآمد کرنے کیلئے اقدامات کرنے چاہئیں ، ایک مرکزی ڈیسک ہونا چاہئے جو کورونا کے مریضوں کو ہسپتالوں میں خالی بستروں کی آگاہی دے ،ہمارے ہسپتالوں میں آکیسجن کا مکمل انتظام ہونا چاہئے ،مریض کو آکسیجن بروقت لگ جائے تو وینٹی لیٹرز پر جانے کی ضرورت نہیں رہتی ، سندھ کے داخلی راستوں پر سختی کی جائے ۔

اس موقع پر ڈاکٹر ز نے کہا کہ بڑی عمر کے افراد کو گھروں میں ویکسین لگانے کے انتظام بھی کیا جائے ، ڈاکٹر سیمی جمالی نے کہا کہ سندھ حکومت کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے اچھا کام کر رہی ہے ، وزیر صحت عذرا پیچوہو کا کہنا تھا کہ محکمہ صحت میں مرکزی سسٹم قائم ہے ، ہسپتالوں میں مریض کو جہاں بستر دستیاب ہوتے ہیں گائیڈ کرتے ہیں ، ہم نے نرسز کی بھرتیاں کی ہیں مزید بھرتیاں کر رہے ہیں۔

وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ پاکستان سٹیل ملز کا آکسیجن پلانٹ تین ماہ میں تیار ہو سکتا ہے ، اس پلانٹ کو کارآمد بنانے کیلئے ایک ارب روپے کی لاگت آئے گی ، سندھ حکومت پلانٹ کا جائزہ لیکر اسے چلائے گی ، ہم ایک ارب روپے خرچ کرنے کیلئے تیار ہیں ، ہمیںآکسیجن کی ضرورت ہو گی ، ہمیں بھرپور تیاری کرنی ہے۔

مزید :

قومی -