بھارت کی خاتون رکن اسمبلی کے والدین نے ایک ہی چتا میں جل کر محبت کی نئی داستان رقم کردی

بھارت کی خاتون رکن اسمبلی کے والدین نے ایک ہی چتا میں جل کر محبت کی نئی داستان ...
بھارت کی خاتون رکن اسمبلی کے والدین نے ایک ہی چتا میں جل کر محبت کی نئی داستان رقم کردی

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک میاں بیوی نے زندگی بھر ایک دوسرے کا ساتھ دیا اور آخر میں ایک ہی چتا میں چل کر محبت کی نئی داستان رقم کر دی۔ انڈین ایکسپریس کے مطابق آتما سنگھ نامی 96سالہ شخص بھارتی فوج میں آفیسر رہ چکا تھا۔ وہ نئی دہلی کے علاقے آنند نکیتن میں رہائش پذیر تھا جہاں اس کی موت واقع ہوئی۔ اس کے مرتے ہی اس کی 84سالہ بیوی سرلا آتما کی حالت بھی بگڑ گئی ، جسے گڑگاﺅں کے میڈینٹا ہسپتال لیجایا گیا جہاں چند گھنٹے بعد اس کی بھی موت ہو گئی۔

آتما سنگھ کی بیٹی کرن چوہدری، جو ہریانہ سے کانگریس کے ٹکٹ پر رکن اسمبلی بھی ہیں، نے بتایا ہے کہ ”میرے ماں باپ دونوں ایک ہی چتا میں جلائے گئے۔ ان کی آخری رسومات دہلی کینٹ میں واقع شمشان گھاٹ پرہوئیں۔ ہم ان دونوں کے ایک ساتھ جان پر بہت دل گرفتہ ہیں مگر ہم جانتے تھے کہ وہ اکٹھے ہی جائیں گے کیونکہ وہ دونوں ایک دوسرے سے بہت محبت کرتے تھے اور میرا باپ ہمیشہ کہا کرتا تھا کہ وہ میری ماں کو اپنی موت پر اکیلا رونے کے لیے نہیں چھوڑے گا۔ وہ اکٹھے دنیا سے رخصت ہوئے اور بھارتی فوج نے ان دونوں کی میتیں ایک ہی چتا پر جلائیں۔“

مزید :

بین الاقوامی -