شام کا بحران صرف مذاکرات اور سیاسی عمل کے ذریعہ ہی حل کیا جا سکتا ہے: ایران

شام کا بحران صرف مذاکرات اور سیاسی عمل کے ذریعہ ہی حل کیا جا سکتا ہے: ایران

تہران (اے پی پی) ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ شام کا بحران صرف مذاکرات اور سیاسی عمل کے ذریعہ ہی حل کیا جا سکتا ہے۔ اپنے ترک ہم منصب احمد داود اوگلو سے ملاقات کے بعد صحافےوں سے گفتگو کرتے ہوئے ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ شام کے مسئلہ پر ایران اپنے اصولی موقف پر قائم ہے، ہم سمجھتے ہیں کہ شامی بحران کا حل صرف ڈائیلاگ ہے، شام میں فرقہ وارانہ شدت پسندی علاقائی امن اور سلامتی کیلئے خطرناک ہے۔ انہوں نے کہا کہ طویل المدتی کوششوں کے بعد تمام فریقین نے تسلیم کیا ہے کہ شامی مسئلہ کا حل فوجی ایکشن نہیں بلکہ سیاسی اور سفارتی مذاکرات ہی بہترین حل ہے۔ شام میں دہشت گردوں اور بیرونی حمایت یافتہ باغی گروپوں کو اسلحہ کی فراہمی بند ہونی چاہئے اور ان کی ہر قسم کی امداد روک دی جائے تو قیام امن میں حائل رکاوٹیں ازخود ختم ہو جائیں گی۔

مزید : عالمی منظر