جس کرتب میں دادا کی جان چلی گئی پوتے نے کر دکھایا

جس کرتب میں دادا کی جان چلی گئی پوتے نے کر دکھایا
جس کرتب میں دادا کی جان چلی گئی پوتے نے کر دکھایا

  

شکاگو (نیوز ڈیسک) اگر یہ کہا جائے کہ امریکی شخص نک ولینڈا دنیا کا سب سے خطرناک اور خوفناک کرتب کرنے کے ماہر ہیں تو غلط نہ ہوگا۔ نک سینکڑوں فٹ بلندی پر تنی تار پر چلنے کے ماہر ہیں اور تازہ ترین کارنامے میں انہوں نے سینکڑوں فٹ بلند ڈھلوان تار پر چلنے اور آنکھوں پر پٹی باندھ کر تار پر چلنے کا ناقابل یقین ریکارڈ بنالیا ہے۔ پہلے کرتب کیلئے سٹیل کی تار دریاشکاگو کے اوپر 500 فٹ کی بلندی پر نصب کی گئی تھی۔ اس کا ایک سرا ایک کنارے پر واقع مرنیا سٹی ٹاور جبکہ دوسرا سرا دوسرے کنارے پر واقع لیوبرنٹ بلڈنگ کی چھت پر باندھا گیا تھا۔ یہ پہلا موقع ہے کہ اس قدر بلندی پر ڈھلوان تار پر چلنے کا مظاہرہ کیا گیا ہے۔ لیوبرنٹ بلڈنگ والا سرا دوسری طرف کی نسبت تقریباً 19 ڈگری زیادہ بلند تھا جو کہ اس کرتب کو انتہائی خطرناک بنانے والا اہم عنصر تھا۔ نک نے یہ خوفناک فاصلہ 6 منٹ 52 سیکنڈ میں طے کیا جبکہ دوسرے کرتب میں سینکڑوں فٹ کی بلندی پر تنی تار کے اوپر آنکھوں پر کالی پٹی باندھ کر چلنے کا مظاہرہ کیا گیا۔ یہ تار مرنیاسٹی بلڈنگ کے دو ٹاوروں کے درمیان لگائی گئی تھی۔ اس دوران انتہائی سرد ہوا 30 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے چل رہی تھی لیکن نک نے حیرت انگیز توازن کا مظاہرہ کرتے ہوئے بغیر کسی حفاظتی اقدام کے تار پر چل کر نئی تاریخ رقم کردی۔ یاد رہے کہ 1978ءمیں نک کے پردادا کارل ولینڈا پورٹوریکو میں 100 فٹ سے زائد بلندی پر لگائی گئی تار کے اوپر چلتے ہوئے گر کر ہلاک ہوگئے تھے لیکن ولینڈا خاندان نے اپنی انتہائی پرخطرروایت جاری رکھی ہوئی ہے۔

مزید :

تفریح -