بیٹی کو جنسی زیادتی کا شکار بنانے والے سے باپ کا خوفناک انتقام

بیٹی کو جنسی زیادتی کا شکار بنانے والے سے باپ کا خوفناک انتقام
بیٹی کو جنسی زیادتی کا شکار بنانے والے سے باپ کا خوفناک انتقام

  

نیو دہلی ( نیوز ڈیسک ) بھارت میں خواتین کی عصمت دری میں خوفناک اضافے کے باوجود قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بے حسی کے باعث متاثرین کی طرف سے قانون ہاتھ میں لینے کا رجحان بھی عام ہو گیا ہے۔دارالحکومت دہلی کے علاقے کھجوری خاص میں نو عمر بیٹی کی عزت تار تار ہونے پر مظلوم باپ نے مجرم کو اپنے ہاتھوں سے عبرت ناک سزا دے ڈالی۔

تفصیلات کے مطابق مذکورہ شخص اپنی دکان پر تھا کہ ادویات کی سپلائی کرنے والا ایک مقامی شخص اس کے گھر ملنے کی غرض سے گیا اور اس کی 14 سالہ بیٹی کو اکیلا پا کر اس کے ساتھ درندگی کر ڈالی۔لڑکی نے والد کو گھر لوٹنے پر اپنے ساتھ ہونے والے ظلم سے آگاہ کر دیا لیکن بدقسمت باپ نے بدنامی اور پولیس کے منفی رویے کے پیش نظر مجرم کو خود ہی سزا دینے کا فیصلہ کیا۔

زیادتی کے واقعے کے دو ماہ تک وہ خاموش رہا تاکہ مجرم یہ سمجھے کہ لڑکی نے اس کے جرم کا پردہ فاش نہیں کیا اور پھر ایک دن بدلے کی آگ میں تڑپتے والد نے مجرم کو ضروری کام کے بہانے اپنے گھر پر بلا لیا۔پولیس کو دیے گئے بیان میں لڑکی کے والد نے بتایا کہ اس نے مجرم کو بلا کر اسے کھانا کھلایا اور پھر اس پر غلبہ پا کر اسے ایک کرسی سے باندھ دیا۔

اس نے مجرم کو برہنہ کر کے لوہے کے چمٹے کو گرم کیا اور اس کی مدد سے مجرم کے نازک اعضاءکو جلا ڈالا اور بعد میں اسے پھانسی دے کر ہلاک کر دیا۔بیٹی سے زیادتی کا بدلہ لینے کے بعد اس نے تھانے میں پیش ہو کر اپنے جرم کا اعتراف کر لیا اور اس کی دی گئی معلومات پر لاش بھی برآمد کر لی ۔پولیس کا کہنا ہے کہ قانونی کاروائی جاری ہے۔

مزید :

جرم و انصاف -