غیر ملکی کی غیر قانونی قید،سعودی حکومت 11کروڑ روپے بطور جرمانہ ادا کرے گی

غیر ملکی کی غیر قانونی قید،سعودی حکومت 11کروڑ روپے بطور جرمانہ ادا کرے گی
غیر ملکی کی غیر قانونی قید،سعودی حکومت 11کروڑ روپے بطور جرمانہ ادا کرے گی

  

جدہ (مانیٹرنگ ڈیسک)ہمارے ہاں جیلوں مین بے شمار ایسے بد قسمت قیدی موجود ہیں جو اپنی سزا پوری ہونے کے باوجود کئی کئی سال سے رہائی کے منتظر ہیں لیکن کوئی پرسان حال نہیں ۔سعودی عرب میں بھی اردن سے تعلق رکھنے والے ایک قیدی کے ساتھ کچھ ایسا ہی معاملہ پیش آ گیا اور اسے قید پوری ہونے کے بعد بھی تین سال تک رہائی نہ ملی ،لیکن جب یہ معاملہ عدالت کے سامنے پیش ہوا تو اس کے ساتھ ہونے والی نا انصافی کے بدلے اسے 43لاکھ سعودی ریال (تقریباً 11کروڑ پاکستانی روپے)بطور حرجانہ ادا کرنے کا حکم سنا دیا گیا۔ اس شخص کو جعلسازی کے الزام میں ایک سال کی قید ہوئی لیکن محکمہ جیل خانہ جات نے مﺅقف اختیار کی کہ ملک بدری کا فیصلہ بر وقت نہ ہونے پر یہ مزید تین سال جیل میں رہا ۔مقدمے میں یہ بات سامنے آئی کی جیل حکام نے ملک بدری کے فیصلے کی غلط تعبیر کر کے غیر قانونی طور پر قید کا عرصہ تین سال تک بڑھا دیا تھا۔بھاری ہرجانے کا حقدار قرار پانے کے باوجود اب متاثرہ شخص کا وکیل عدالت کے سامنے نئی استدعا کرنے والاہے جس میں ہرجانے کی رقم ڈیڑھ کروڑ سعودی ریال(تقریبا ً 41کروڑ پاکستانی روپے )سے زائدکر دی گئی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -