دنیا کی تاریخ میں بور ترین دن ، دلچسپ انکشاف

دنیا کی تاریخ میں بور ترین دن ، دلچسپ انکشاف
دنیا کی تاریخ میں بور ترین دن ، دلچسپ انکشاف

  

لندن ( نیوز ڈیسک ) کیا آپ کو یہ دلچسپ بات معلوم ہے کہ بوریت کے لحاظ سے ہماری جدید تاریخ کا کونسا دن سر فہرست رہا؟

یقینا یہ بات عجیب لگتی ہے کہ ہزاروں لاکھوں دنوں میں سے وہ دن کیسے ڈھونڈا جا سکتا ہے کہ جسے یوم بوریت کہا جا سکے۔لیکن ایک سائنسدان نے دریافت کر لیا ہے کہ تاریخ کا پھیکا ترین دن 11 اپریل 1954 تھا اور اس کے سائنسی ثبوت بھی پیش کر دیے گئے ہیں۔

سائنسدان ولیم ٹنسٹال کہتے ہیں کہ ہر دن میں کوئی نہ کوئی اہم واقعہ ضرور ہوا جیسا کہ کوئی بڑی شخصیت پیدا ہوئی یا فوت ہوئی ، کوئی بڑا حادثہ ہوا یا کوئی بڑی دریافت ہوئی ، کسی دن کوئی اہم تقریب ہوئی تو کوئی دن کسی تباہ کاری کی وجہ سے یادگار رہا لیکن 11 اپریل1954 بروز اتوار کو اس نوعیت کا ایک واقعہ بھی پیش نہ آیا۔

ولیم نے یہ ڈھونڈنے کے لیے جدید سافٹ وئیر پروگرام تیار کیا جسے True Knowledge سرچ انجن کے نام سے جانا جاتا ہے جس کی مدد سے آپ کسی بھی تاریخ میں ہونے والے اہم واقعات کی تفصیل حاصل کر سکتے ہیں۔جب اس سرچ انجن سے 11 اپریل 1954 کی معلومات لی گئیں تو جواب میں صفر نتائج ظاہر ہوئے جبکہ یہ جواب کسی بھی اور تاریخ کے لیے موصول نہ ہوا۔

یہ الگ بات ہے کہ اب یہ دن بوریت میں سر فہرست ہونے کی وجہ سے ایک ایسا اعزاز حاصل کر چکا ہے جو کسی بھی اور دن کو حاصل نہیں ہے۔

مزید :

تفریح -