احتیاطی تدابیر اختیار کر کے ایبولا وائرس سے بچا جا سکتا ہے،پروفیسر ارشاد

احتیاطی تدابیر اختیار کر کے ایبولا وائرس سے بچا جا سکتا ہے،پروفیسر ارشاد

  

لاہور ( خبرنگار) میو ہسپتا ل اورپا کستا ن اکیڈ می آ ف فیملی فز یشنز (رجسٹر ڈ )کے زیر اہتما م میو ہسپتا ل کے آ ٰ ڈیٹو ریم میںگزشتہ روز ایبو لا وائر س سے آگاہی پرسیمینا ر کا ا ہتمام کیا گیا اس سیمینا ر کی میو ہسپتا ل ایسٹ میڈ یکل وارڈ کے پر وفیسر ارشا د حسین قریشی نے صد ارت کی سیمینا رمیں ڈاکٹر طا رق محمو د میا ں ،ڈاکٹر عطا الر حمن بٹ،ڈاکٹر احمد نو ید بھٹی ، ڈاکٹر ثمینہ سعید ،ڈاکٹر طا ہر چو دھری ،ڈاکٹر سجا د ملک ،ڈاکٹر نا ہید ند یم ،ڈاکٹر اعظم خا ن ،ڈاکٹر صہیب احمد ،ڈاکٹر شعیب ،ڈاکٹر نا ہید ند یم ،ڈاکٹر فر حت نعما ن اور ڈاکٹر وں نے کثیر تعد اد میں شرکت کی سیمینا ر سے خطا ب کر تے ہو ئے میو ہسپتا ل کے پر وفیسر ڈاکٹر ارشا د حسین قر یشی نے کہا کہ ایبو لا وائر س کا تعلق ایک ایسے گر وپ سے ہے جو جسم میں داخل ہو کر سب سے پہلے نزلہ زکا م ،کھا نسی ،بخا ر ،گلا درد ،سر درد اور جسم میں شد ید درد سے شر وع ہو تا ہے آ ہستہ آہستہ جگر اور گر دوں کو فیل کر دیتا ہے ،خو ن کی نا لیو ں سے خو ن با ہر نکلنا شر وع ہو جا تا ہے اور مر یض شا ک میں جا کر اپنی جا ن سے ہا تھ دو بیٹھتا ہے یہ وائرس سب سے پہلے 1976میں کا نگو میں دریا فت ہو ا اور کا نگو میں بہنے والے دریا ایبو لا کے نا م سے اس کا نا م رکھا گیا اور یہ سو ڈان اور افر یقہ کے دوسر ے مما لک میں زیا دہ تر پا یا جا تا ہے ابھی تک اس مر ض سے بچاﺅکانہ تو کو ئی حفا ظتی ٹیکہ ہے اور نہ ہی اس کا خا طر خواہ علا ج ہے اس سے 90فیصد مر یضو ں کا انتقا ل ہو جا تا ہے لہذ ا اس مر ض سے احتیا طی تد ابیر کرکے بچایا جا سکتا ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -