سانحہ واہگہ کی تحقیقات کرائی جائینگی ،شہباز شریف کی جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم تشکیل دینے کی ہدایت

سانحہ واہگہ کی تحقیقات کرائی جائینگی ،شہباز شریف کی جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم ...

  

 لاہور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ محمد شہباز شریف نے جنرل ہسپتال کا دورہ کیا اور ہسپتال میں زیر علاج سانحہ واہگہ میں زخمی ہونے والے افراد کی عیادت کی ۔وزیر اعلیٰ فرداً فرداً ہر زخمی کے پاس گئے اور خیریت دریافت کی ۔وزیر اعلیٰ نے ہسپتال انتظامیہ کو ہدایت کی کہ زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات مفت فراہم کی جائیں ۔وزیراعلیٰ نے زخمی ہونے والے افراد سے افسوسناک واقعہ کی تفصیلات بھی معلوم کیں۔اس موقع پر وزیر اعلیٰ نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سانحہ واہگہ انتہائی افسوسناک واقعہ ہے جس میں قیمتی جانیں ضائع ہوئی ہیں ۔واقعہ پر پوری قوم رنجید ہ ہے اور اس واقعہ کی جنتی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔انہو ں نے کہا کہ معصوم لوگوں کے خون سے ہاتھ رنگنے والے درندے کسی رعایت کے مستحق نہیں ۔ ذمہ دار عناصر کو ہر صورت قانون کے شکنجے میں لایا جائے گا ۔معصوم انسانوں سے بربریت کا کھیل کھیلنے والے عبرتناک سزا سے بچ نہیں پائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ قوم کو آج اتحاد اور اتفاق کی ضرورت ہے ۔اجتماعی کاوشوں اور مشترکہ سوچ اپنا کر انتہا پسندی اور دہشت گردی کا خاتمہ کیا جا سکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پوری قوم متحد ہے انشاء اللہ اتحاد کی قوت سے ملک کو دہشت گردی کے عفریت سے پاک کر کے امن کا گہوارہ بنائیں گے ۔دریں اثناء وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی زیرصدارت یہاں اعلی سطح کا اجلاس ہوا۔جس میں سانحہ واہگہ کامختلف پہلوؤں سے جائزہ لیا گیا۔اجلاس میں سانحہ واہگہ کی ابتدائی رپورٹ پیش کی گئی۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے افسوسناک واقعہ کے حوالے سے جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم تشکیل دینے کی ہدایت کی اورکہاکہ واہگہ بارڈر پر پیش آنے والے واقعہ کی تحقیقات کرائی جائیں گی۔انہوں نے کہا کہ سانحہ واہگہ کے بعد یوم عاشور پر سکیورٹی انتظامات کو مزید سخت کیا جائے۔پولیس اورمتعلقہ ادارے ملک دشمن عناصر کے مذموم عزائم ناکام بنانے کیلئے چوکس رہیں۔مشکوک افراد پرکڑی نظر رکھی جائے اورتمام متعلقہ ادارے بہترین کوآرڈینیشن کے تحت کام کریں۔اس موقع پر ترجمان حکومت پنجاب زعیم حسین قادری نے کہا کہ وزیراعلیٰ کی خصوصی ہدایت پر یوم عاشور کے موقع پر صوبہ بھر میں سکیورٹی انتظامات کو مزید بہتر بنانے کیلئے ہدایات جاری کردی گئی ہیں۔جلوسوں اورمجالس کی حفاظت کیلئے چار درجاتی حصار پر مکمل عملدرآمد کیا جائے گا۔اجلاس میں صوبائی وزراء کرنل(ر) شجاع خانزادہ،بلال یاسےٰن،ترجمان پنجاب حکومت زعیم حسین قادری، ایم پی اے رانا ثناء اللہ،معاون خصوصی رانا مقبول احمد،چیف سیکرٹری،انسپکٹرجنرل پولیس،سیکرٹری داخلہ، کمشنر لاہور ڈویژن اورمتعلقہ حکام نے شرکت کی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی زیر صدارت یہاں اعلی سطح کے اجلاس میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے تناسب سے ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں کمی کی منظوری دی گئی۔ صوبائی وزیر خوراک بلال یاسین،ایم پی اے ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا،چےئرمین لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی خواجہ احمد حسان، چیف سیکرٹری،چےئرمین منصوبہ بندی و ترقیات،متعلقہ سیکرٹریزاور اعلی حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پٹرولیم منصوعات کی قیمتوں میں کمی کافائدہ براہ راست عوام کوپہنچنا چاہیے۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں کمی پرمکمل عملدر آمدیقینی بنایا جائے۔عوام سے مقررکردہ شرح سے زائد کرایہ وصول کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ نئے کرایوں کے بارے میں عوام کو بھر پور آگاہی دی جائے۔پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے فوائد عام آدمی کا حق ہے ۔وزیراعلیٰ نے ٹرانسپورٹ کے نئے کرایوں پر عملدر آمد کے حوالے سے مانیٹرنگ کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی۔سیکرٹری ٹرانسپورٹ نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ نان اے سی اربن ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں 5.6فیصد کی کمی کی گئی ہے ۔نان اے سی انٹر سٹی ٹرانسپورٹ کے کرائے 7.5فیصد کم کئے گئے ہیں ۔گڈ زٹرانسپورٹ کے کرایوں میں 8فیصد کمی کی گئی ہے ۔اےئر کنڈیشن بس سروس کے کرایوں میں 10فیصد تک کمی کی گئی ہے جبکہ کچھ سروسز پر 5.6فیصدکمی کی گئی ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف سے یہاں پاکستان میں جرمنی کے سفیرڈاکٹرسیرل نن نے ملاقات کی۔ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور، دوطرفہ تعلقات کے فروغ اور مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے پر تبادلہ خیال ہوا۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے جرمن سفیر سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جرمنی اور پاکستان کے درمیان اچھے دوستانہ اورتجارتی تعلقات قائم ہیں۔ دونوں ملکوں کے درمیان معاشی تعلقات کو مزید فروغ دینے کی ضرورت ہے ۔وزیراعظم نوازشریف کے دورہ جرمنی سے دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات میں مزید وسعت آئے گی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اورجرمنی کے بزنس مینوں کے درمیان باہمی روابط بڑھانے کی ضرورت ہے اوراس ضمن میں تجارتی وفود کے زیادہ سے زیادہ تبادلے ہونے چاہئیں۔انہو ں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان نے بے پناہ قربانیاں دی ہیں ۔دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پوری قوم متحد ہے۔واہگہ پر پیش آنیوالے افسوسناک واقعہ میں قیمتی انسانی جانوں کا ضیاع ہوا ہے،جس پر پوری قوم رنجیدہ ہے ۔ جرمن سفیرنے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاو ن بڑھانا چاہتے ہیں ۔انہوں نے سانحہ واہگہ کی مذمت کی اورقیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کیا۔

مزید :

صفحہ اول -