پیپلز پارٹی لاہور اور پنجاب کی تنظیم سازی عروج پر پہنچ گئی

پیپلز پارٹی لاہور اور پنجاب کی تنظیم سازی عروج پر پہنچ گئی

  

لاہور(شہزاد ملک )پاکستان پیپلز پارٹی کے چیرمین بلاول بھٹو زرداری کی صدارت میں 30نومبر کو لاہور کے بلاول ہاؤس میں پارٹی کے یوم تاسیس کے موقع پر منعقد ہونے والے ورکر کنونشن سے قبل پیپلز پارٹی لاہور اور پنجاب تنظیم نے اپنی اپنی تنظیم سازی کو مکمل کرنے کے لئے دن رات کام شروع کردیا ہے او اس سلسلے میں تنظیم سازی کو چیک کرنے اور مانیٹر کرنے کے لئے مختلف مانیٹرنگ کمیٹیاں بھی قائم کردی ہیں تاکہ چیرمین کو لاہور کے دورے کے موقع پر ہر ضلع کی مکمل تنظیمی رپورٹ پیش کی جا سکے جبکہ لاہور تنظیم نے لاہور کے کارکنوں اور عہدیداروں سے بلاول ہاؤس کے ورکر کنونشن میں شرکت کے لئے انہیں نئے فارم مہیا کرکے ان سے تازہ تصاویریں بھی مانگ لی ہیں اور ورکر کنونشن کی بھرپور تیاریاں بھی شروع کردی ہیں لاہور اور پنجاب دونوں اپنی اپنی جگہ پر تنظیم سازی کاکام مکمل کرنے کے لئے سرگرم ہو گئے ہیں ۔ ذرائع کے مطابق پارٹی کے چیرمین بلاول بھٹو زرداری کو یہ رپورٹ دی گئی تھی کہ تنظیم سازی کا کام نہ مکمل ہے اور بہت سے اضلاع ایسے بھی ہیں جہاں پر کوئی بھی پارٹی کا عہدیدار موجود ہی نہیں ہے اس اطلاعات کی روشنی میں انہوں نے پنجاب تنظیم کو ہدائت کی تھی کہ لاہور میں پارٹی کے یوم تاسیس کے ورکر کنونشن سے قبل پارٹی کی تنظیم سازی کاکام مکمل کیا جائے اور غیر فعال لوگوں کو فارغ کرکے ان کی جگہ پر متحرک لوگوں کو آگے لایا جائے ۔ذرائع کے مطابق اسی سلسلے میں گزشتہ دنوں پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے پنجاب کے مختلف ڈوثیرننز کی تنظیم کی کارکردگی کو چیک کرنے کے لئے پنجاب تنظیم میں شامل لوگوں کی مانیٹرنگ کمیٹیاں تشکیل دیدی ہیں اور لاہور تنظیم کی کارکردگی کو بھی چیک کرنے کے لئے کمیٹی نمبر 4تشکیل دیدی ہے جو لاہور کی کارکردگی کو چیک کرکے پنجاب کو اپنی رپورٹ پیش کرے گی ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اس کمیٹی کی وجہ سے لاہور اور پنجاب تنظیم کے درمیان اندرون خانہ اختلافات بھی پیدا ہو گئے ہیں جن کا اظہار پارٹی کی اعلی قیادت کے سامنے بھی کیا جائے گا۔

مزید :

صفحہ آخر -