شہری نے بری ڈرائیونگ کرنے والوں پر اندھا دھند گولیاں برسا دیں

شہری نے بری ڈرائیونگ کرنے والوں پر اندھا دھند گولیاں برسا دیں

  

برلن ( نیوز ڈیسک ) سڑک پر دوران سفر ہمیں اکثر ایسے غیر ذمہ دار ڈرائیوروں سے واسطہ پڑتا ہے جن کی بری ڈرائیونگ ہمارے لیے سخت کوفت اور خطرے کا باعث بنتی ہے۔لیک ہم کیا کر سکتے ہیں سوائے صبر کے۔جرمنی کے ایک صاحب کئی سالوں سے ٹرک ڈرائیونگ کر رہے تھے اور وہ بھی غیر ذمہ دار ڈرائیوروں سے بہت تنگ تھے۔ایک دن اچانک جب ایک بڑے ٹرک نے انہیں تقریباً سڑک سے نیچے دھکیل دیا تو ان صاحب نے غیر ذمہ دار ڈرائیوروں کو سبق سکھانے کا فیصلہ کر لیا۔مائیکل کوئنگ نامی ان 58 سالہ ڈرائیور نے " برے " ڈرائیوروں پر دوران ڈرائیونگ 762مرتبہ گولی چلائی تاکہ ان کی اصلاح کی جا سکے۔گرفتاری کے بعد مائیکل نے عدالت میں بتایا کہ وہ ایک عرصے سے غیر ذمہ دار ڈرائیوروں کی وجہ سے پریشان تھا اور جب کاریں لے جانے والے ایک بڑے ٹرک نے اسے خطرناک طریقے سے سڑک سے نیچے دھکیلا تو اس کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو گیا۔اس نے ایک پستول خرید لیا اور گھر مین خود ہی اس کے لیے سائیلنسر تیار کر لیا۔اس کے بعد جب بھی کوئی ڈرائیور اس کے لیے پریشانی پیدا کرتا تو یہ اس پر گولی چلا دیتا۔جرمنی کی ہائی ویز پر پانچ سال تک اس کی دہشت پھیلی رہی اور اس دوران متعدد افراد کے زخمی ہونے کے علاوہ چار افراد مرتے مرتے بچے۔بالآخر 500 سے زائد پولیس والوں نے سات ہائی ویز کی مسلسل نگرانی کر کے اسے گرفتار کر لیا۔اس کے پاس متعدد پستول ، بندوقیں اور 1100 سے زائد گولیاں برآمد ہوئیں۔اکثر اسلحہ اس نے اپنے گھر میں بنائی ہوئی ورکشاپ میں تیار کیا تھا۔پریشان کرنے والے ڈرائیوروں کو گولی سے سبق سکھانے والے اس منفرد ڈرائیور کو دو ماہ کے مقدمے کے بعد 10 سال کے لیے جیل بھیج دیا گیا۔

مزید :

صفحہ آخر -