سانحہ واہگہ بارڈر، مبینہ دہشتگرد نے پولیس بلاکر گرفتاردیدی ، تفتیشی ٹیم پریشان

سانحہ واہگہ بارڈر، مبینہ دہشتگرد نے پولیس بلاکر گرفتاردیدی ، تفتیشی ٹیم ...
سانحہ واہگہ بارڈر، مبینہ دہشتگرد نے پولیس بلاکر گرفتاردیدی ، تفتیشی ٹیم پریشان

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) واہگہ بارڈر کے قریب خودکش حملے کے الزام میں ایک ایسے مبینہ دہشتگردکو حراست میں لے لیاگیاہے جس کے بیانات میں نہ صرف لاہورپولیس بلکہ حساس اداروں کے ذمہ داران کو بھی چکرادیاہے ۔ مبینہ دہشتگرد خودکش حملہ آور کا ساتھی ہے ؟ کسی کاکالعدم تنظیم کا رکن ہے یا اس کا ذہنی توازن درست نہیں ؟ اس حوالے سے مزید تفتیش کے لیے ملزم کو نامعلوم مقام پر منتقل کردیاگیا۔

تفصیلات کے مطابق 15پر پولیس کو اطلاع ملنے کے لیے پولیس اور حساس ادارے کی ٹیم نے غالب مارکیٹ کے علاقے سے ڈیرہ غازی خان کے محمداکمل شاہ کو حراست میں لے لیا۔ گرفتار شخص نے ابتدائی تفتیش میں انکشاف کیاکہ وہ ہفتے کی رات فوٹریس سٹیڈیم میں موجودتھاجہاں گراﺅنڈ میں چار نامعلوم نوجوان جو شکل وصورت سے افغانی لگتے تھے ، یہ پلان بنارہے تھے کہ خودکش حملے کا پہلا ٹارگٹ واہگہ بارڈر ہے ، دوسرا بی بی پاکدامن ، تیسرا اندرونی موچی گیٹ اور چوتھا کربلاگامے شاہ ہے ۔

اُن میں سے ایک نے کہاکہ کل میں اپنا ہدف واہگہ بارڈر پوراکرلوں گا اورپھر ہماری ملاقات کبھی نہیں ہوگی جس کے بعد وہ اُٹھ کر چلے گئے ۔

دنیا نیوز کے مطابق تفتیشی ٹیم کے استفسار پر ملزم نے کہاکہ وہ ساتھیوں کی اطلاع کسی کو کیوں دے ؟ اب خود ہی 15پر کال کی تاکہ اپنی گرفتاری دے سکے ،سانحہ واہگہ بارڈر سے دل میں خوف خداپیداہوا، مزید خونریزی نہیں دیکھ سکتاتاہم سرکاری طورپر پولیس نے گرفتاری کی تصدیق یا تردید نہیں کی ۔

یادرہے کہ اتوار کو  واہگہ بارڈرخودکش حملے میں 60 کے لگ بھگ پاکستانی شہری موت کے منہ میں چلے گءے تھے ۔ 

مزید :

قومی -اہم خبریں -