چین کا لیزر ٹیکنالوجی سے ڈرون گرانے کا کامیاب تجربہ

چین کا لیزر ٹیکنالوجی سے ڈرون گرانے کا کامیاب تجربہ
چین کا لیزر ٹیکنالوجی سے ڈرون گرانے کا کامیاب تجربہ

  

 بیجنگ (مانیٹرنگ ڈیسک)چین نے لیزر ٹیکنالوجی کی مدد سے ڈرون گرانے کا کامیاب تجربہ کر لیا ہے، اب نیچی اور آہستہ پرواز کرنے والے ڈرون طیاروں کو نشانہ بنا یا جا سکتا ہے۔

چینی میڈیا کے مطابق اس سسٹم کے تحت دو کلو میٹر کے دائرے میں نشانے کا پتہ لگانے کے بعد محض پانچ سیکنڈ میں ڈورن کو نشانہ بنایا جا سکتا ہے۔ سسٹم ڈیزائن کرنے کا مقصد 500 میٹر کی بلندی سے نیچے اڑنے والے ڈرون کو تباہ کرنا ہے اور وہ 180 کلو میٹر فی گھنٹہ سے کم رفتار میں یہ کام کر سکتا ہے۔ اس سسٹم کی خاص بات یہ ہے کہ اسے گاڑیوں میں بھی نصب کیا جا سکتا ہے اور شہری علاقوں میں اڑنے والی اشیا سے بچاﺅ کا سبب بن سکتا ہے۔ دنیا کے دیگر ملک لیزر ہتھیار استعمال کر رہے ہیں۔ امریکہ نے ڈرون اور چھوٹے جہازوں سے دفاع کے لیے بحری جہازوں میں اسے نصب کر رکھا ہے۔ یہ ہتھیار بجلی کی مدد سے چلتے ہیں اور میزائل کا بہترین متبادل ثابت ہو سکتے ہیں ، ان کی سب سے بڑی خوبی یہ ہے کہ عام میزائل کے مقابلے میں لیزر ہتھیار مستقل فائر کر سکتے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -