تہران میں سعودی سفارتخانے پر حملے کے ملزمان باعزت بری

تہران میں سعودی سفارتخانے پر حملے کے ملزمان باعزت بری

  

تہران(اے پی پی) ایران کی ایک عدالت نے رواں سال 2 جنوری کو تہران میں قائم سعودی عرب کے سفارت خانے اور مشہد میں قونصل خانے پر یلغار کرنے کے لیے درجنوں ملزمان کو باعزت بری قرار دیا ہے۔ ایرانی خبر رساں ادارے کے مطابق تہران کی ایک عدالت نے سعودی عرب کے سفارت خانے پر یلغار کرنے میں ملوث 45 افراد کو بری قرار دیا ہے۔ عدالت کا کہنا ہے کہ سعودی سفارت خانے میں توڑپھوڑ، اس میں آگ لگانے، عملے کو یرغمال بنانے اور بدنظمی پھیلانے کے واقعات سے ان کا کوئی تعلق نہیں۔بری ہونے والے تمام ملزمان نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ سعودی سفارت خانے پر یلغار کے وقت پولیس اور سیکیورٹی اداروں نے انہیں روکا نہیں۔ یہی دعویٰ سعودی عرب کے سفارت خانے پر حملے کے ایک منصوبہ ساز حسن کرد نے بھی عدالت کے روبر بیان دیتے ہوئے کیا تھا۔ اس کے علاوہ اس نے صدر حسن روحانی کے نام لکھے گئے ایک مکتوب میں کہا تھا کہ پولیس نے بلوائیوں کو سعودی عرب کے سفارت خانے پر یلغار کے لیے خود مہلت اور سہولت مہیا کی تھی۔

مزید :

عالمی منظر -