ایران میں طلباء کو غیرملکی سفارتخانوں پر چڑھائی کی تعلیم دینے کاحکم

ایران میں طلباء کو غیرملکی سفارتخانوں پر چڑھائی کی تعلیم دینے کاحکم

  

تہران(این این آئی)غیرملکی سفارتخانوں اور قونصل خانوں پر حملوں کے غیرمہذبانہ واقعات پر عالمی تنقید کا سامنا کرنے کے باوجود ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای نے محکمہ تعلیم کو طلباء کو ’سفارتخانوں‘ پر حملوں کی تعلیم دینے کی ہدایت کی ہے ۔عرب ٹی وی کے مطابق ایران کے رہبر اعلیٰ خامنہ ای نے وزارت تعلیم کو ہدایت کی کہ وہ 1979ء میں ملک میں ولایت فقیہ کے انقلاب کے وقت امریکی سفارت خانے پر حملے کے واقعے کو تعلیمی نصاب میں شامل کرے اور اس واقعے ایران میں انقلاب ثانی کی حیثیت دیتے ہوئے سفارت خانوں پر یلغار کی تعریف وتوصیف کی جائے۔آیت اللہ علی خامنہ ای نے یہ انکشاف بھی کیا کہ سنہ 1979ء میں تہران میں قائم امریکی سفارت خانے پر حملہ اور کئی ماہ تک سفارتی عملے کو یرغمال بنائے جانے کی ہدایت بانی انقلاب آیت اللہ علی خمینی کی طرف سے دی گئی تھی۔ امریکی سفارت خانے پر یلغار کے واقعے نے ایران میں متشدد طبقے کے لیے ایک نیا اصول متعین کردیا جس پر چلتے ہوئے انہوں نے برطانیہ اور سعودی عرب سمیت کئی دوسرے ملکوں کے سفارت خانوں، قونصل خانوں اور نمائندہ دفاتر پر بھی حملے کیے۔

مزید :

عالمی منظر -