چینی زبان سیکھنے والوں کو چین میں کاروباری و ملازمت کے موقع دستیاب ہونگے

چینی زبان سیکھنے والوں کو چین میں کاروباری و ملازمت کے موقع دستیاب ہونگے

  

لاہور(کامرس رپورٹر )چینی زبان سیکھنے والے پاکستانی شہری پاک چین اقتصادی راہداری کے نتیجے میں پیدا ہونے والے کاروباری اور ملازمتی مواقع سے بھرپور فائدہ اٹھا سکیں گے ۔ان خیالات کا اظہار پاک چین جوائینٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر مسٹر وانگ زہائی نے چینی زبان کے اساتذہ کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران کیا۔ اس موقع پر منعقدہ اجلاس میں چینی زبان کے تدریسی نظام کو جدید بنانے کیلئے مختلف تجاویز پر غور و خوض کیا گیا ۔ اجلاس میں چیمبر کے سیکرٹری جنرل صلاح الدین حنیف اور ایگزیکٹو کمیٹی ممبران نے بھی شرکت کی ۔مذکورہ اجلاس چیمبر کے فاؤنڈر پریزیڈنٹ شاہ فیصل آفریدی کی خصوصی کال پر طلب کیا گیا تھا۔پنجاب کے مختلف اضلاع سے 15 اساتذہ نے میٹنگ میں شرکت کی جو کہ چیمبر کے چینی زبان پروگرام کے ساتھ منسلک ہیں ۔تمام اساتذہ نے طالب علموں، تاجروں ، نوجوانوں اور کاروباری حضرات کیلئے چینی زبان کو ایک دلچسپ سرگرمی بنانے کیلئے مفید تجاویز پیش کیں ۔اجلاس کے دوران مسٹر وانگ زہائی نے آگاہ کیا کہ پاک چین جوائینٹ چیمبر نے اُس وقت چینی زبان کے تدریسی پروگرام کا آغاز کیا جس وقت عوام میں اس زبان کو سیکھنے کی اہمیت کا پوری طرح اندازہ نہیں تھا مگر چیمبر کی انتھک کاوشوں اور اس پروگرام سے منسلک قابل لینگویج انسٹرکٹرز کی محنت کی بدولت آج ہزاروں لوگ اس پروگرام سے مستفید ہوے ہیں۔

جو کہ چیمبر کیلئے عظیم الشان اعزاز سے کم نہیں ہے۔مسٹر وانگ نے زیادہ جوش اور لگن سے چیمبر کے اس اقدام کو جاری رکھنے کی یقین دہانی کرائی۔اس موقع پر صلاح الدین حنیف نے کہا کہ مارکیٹ کی حالیہ صورتحال کے مطابق چینی زبان کی تدریس میں مقابلہ اپنے عروج تک پہنچ چکا ہے اور بہت سے نام نہاد اداروں نے وقت کی اس اہمضرورت کو پیسہ بنانے کا ذریعہ بنا لیا ہے تاہم چیمبر کا مقصد کم وقت میں چینی زبان کو زیادہ سے زیادہ عوام تک پھیلانا ہے جس کیلئے روائتی طریقہ کار سے ہٹ کر اختراعی سٹریٹجی تشکیل دینے کی ضرورت ہے ۔ اُنہوں نے میٹنگ میں موجود تمام لینگویج انسٹرکٹرز سے گزارش کی اپنی تخلیقی صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوے ایسا تدریسی نظام متعارف کرائیں جو کہ چینی زبان کی تدریس میں انقلاب برپا کر دے۔اس موقع پر پاک چین چیمبر کے بانی صدر شاہ فیصل آفریدی نے کہا کہ چیمبر کی جانب سے شروع کردہ چینی زبان پروگرام کو تقریبا ایک سال مکمل ہو گیا ہے اور اب طالب علموں کو مارکیٹ میں کامیابی سے آگے بڑھانے کیلئے تخلیقی تدریسی حکمت عملی وضع کرنے کی ضرورت ہے۔چیمبر کے عہدیداران نے اجلاس میں موجودلینگویج انسٹرکٹرز کے سامنے بیشتر تجاویز پیش کیں جن میں ایسے نصاب کی تشکیل کا مشورہ دیا گیا جو کہ ہر سطح کی تعلیمی اہلیت رکھنے والوں کیلئے سمجھنے میں آسان ہو،لیکچرز کے ویڈیو لنکس بنانے کی تجویز پر بھی غور کیا گیا اور تجویز دی گئی کہ نصاب میں زیادہ سے زیادہ چینی charactersکو سکھایا جائے اور موسیقی، ڈرامہ، شاعری اور چینی ادب جیسی سرگرمیوں کے ذریعے تدریسی عمل کو دلچسپ بنایا جائے، بنیادی کورس کے ساتھ ساتھ HSK لیول 1-2 کی تیاری بھی کرائی جائے۔میٹنگ میں موجودتمام لینگویج انسٹرکٹرز نے حالیہ تدریسی ں ظام میں نئے رجحانات متعارف کرانے کے لئے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی۔

مزید :

کامرس -