بزنس کمیونٹی کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کروایا جائے : پیاف

بزنس کمیونٹی کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کروایا جائے : پیاف

  

لاہور(کامرس رپورٹر) پاکستان انڈسٹریل اینڈ ٹریڈرز ایسو سی ایشنز فرنٹ (پیاف ) کے چئیرمین عرفان اقبال شیخ نے کہا ہے کہ بزنس کمیونٹی مشکلات کے باوجود ملکی معیشت کی ترقی میں اپنا کردار ادا کر رہی ہے، ٹیکس دینے کے باوجود بزنس کمیونٹی ہراسمنٹ کا شکار ہے گورنمنٹ کے چند ادارے سیکشن 38 بی اور40 بی کے زور پربزنس کمیونٹی کے لئے آسانیاں پیدا کرنے کی بجائے مشکلات پیدا کر رہے ہیں جسکی وجہ سے صنعتکار اور تاجر برادری نہایت پریشان ہیں، ان خدشات کا اظہار چیئر مین پیاف عرفان اقبال شیخ نے گزشستہ روز پیاف کی کور کمیٹی کے ہمراہ گورنر پنجاب رفیق رجوانہ سے ملاقات کے دوران کیا ، انھوں نے کہا کہ سی پیک بہت بڑی کامیابی ہے جسمیں حکومت مختلف پراجیکٹس پرکام کر رہی ہے مگر اس بات کا خیال رکھا جائے کہ نئے انڈسٹریل زونز میں اتنی مراعات نہ دی جائیں کہ جس سے موجودہ انڈسٹری متاثر ہو۔

عرفان اقبال نے کہا کہ بزنس کمیونٹی امید کرتی ہے کہ2018 تک انرجی بحران کا مسئلہ حل کر لیا جائے گا، چیئر مین نے کہا کہ ہم تمام مسائل کے حل کیلئے حکومت کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔ تاجر برادری ملک کو بحرانوں سے نکالنے میں پہلے ہی اپنا فرض ادا کر رہی ہے ۔ عرفان اقبال شیخ نے گورنر پنجاب سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ متعلقہ اداروں پر زور دیا جائے کہ بزنس کمیونٹی کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کریں تاکہ گورنمنٹ اور تاجر برادری کا تعلق ہمیشہ قائم رہے۔پیاف کے پیٹرن انچیف میاں انجم نثار نے کہا کاسٹ آف ڈؤنگ بزنس میں اضافے کے باعث صنعتکار کافی پریشان ہیں۔ برآمدات کو بڑھانے کیلئے پالیسیز کو ری ایڈریس کیا جائے سیلز ٹیکس ریفنڈ کی ادائیگیاں اگر وقت پر نہیں ہوئیں تو انکا کوئی فائدہ نہیں ہے ۔ برآمد کنندگان سخت مشکلات کا شکار ہیں ریفنڈز کی فوری ادائیگی کی جائے۔اس موقع پر گورنر پنجاب رفیق رجوانہ نے تاجروں اور صنعتکاروں پر مشتمل پیاف کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان بزنس کمیونٹی کی بدولت ہی ترقی کی منازل طے کر سکتا ہے ، جب تک بزنس کمیونٹی کمفورٹیبل نہیں ہو گی ہماری اکانومی کمفورٹیبل نہیں ہو گی ۔حکومت بزنس کمیونٹی کے ساتھ مکمل رابطے میں ہے اور تاجروں اور صنعتکاروں کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جا رہا ہے ۔پیاف کے وفد میں سابق صدر لاہور چیمبر محمد علی میاں، ناصر حمید خان، خواجہ شاہزیب اکرم، ، عدنان خالد بٹ، غلام سرور ملک ودیگر شامل تھے۔

مزید :

کامرس -