معیشت میں بہتری کیلئے حکومت ٹیکس در ٹیکس کا نظام ختم کرے،خالد پرویز

معیشت میں بہتری کیلئے حکومت ٹیکس در ٹیکس کا نظام ختم کرے،خالد پرویز

  

لاہور (کامرس رپورٹر) صدر آل پاکستان انجمن تاجران خالد پرویز نے کہا ہے کہ معیشت میں پائیدار بہتری لانے اور ایٹمی پاور کو اکنامک پاور بنانے کے لیے حکومت ٹیکس در ٹیکس کا نظام ختم کرے۔ ملک کے طاقتور طبقوں کو ٹیکس نیٹ میں لایا اور ان سے پورا ٹیکس لیا جائے۔ تاجروں اور صنعتکاروں کو ہراساں کرنے کی بجائے بزنس فرینڈلی ماحول پیدا کیا جائے۔ وزیر خزانہ اسحاق ڈار بینکنگ وِد ہولڈنگ ٹیکس ختم کریں۔ یہ کاروباری طبقے اور حکومت کے مابین اعتماد کی بحالی میں بڑی رکاوٹ ہے۔

انہوں نے کہا اگر حکومت ٹیکس سسٹم درست بنیادوں پر استوار کرے اور اسے آسان بنائے تو اسے دھڑا دھڑ قرض لینے سے نجات مل سکتی ہے۔ ٹیکس سسٹم کا درست نہ ہونا اور بے تحاشہ کرپشن پاکستان کو دیمک کی طرح چاٹ رہی ہے۔ FBR کے پاس لگژری بنگلوں میں رہنے اور بڑی گاڑیاں انجوائے کرنے والے ٹیکس نہ دینے والوں کی جو فہرستیں ہیں وہ کب تک محض فائلوں کی زینت بنی رہیں گی۔ پاکستان میں ٹیکس کلچر کے فروغ کے لیے اِن کے خلاف کارروائی از بس ضروری ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -