ینگ فارماسسٹوں کا کوئٹہ میں گرفتاریوں کے خلافاحتجاجی مظاہرہ

ینگ فارماسسٹوں کا کوئٹہ میں گرفتاریوں کے خلافاحتجاجی مظاہرہ

  

لاہور (جنرل رپورٹر) ینگ فارماسسٹ ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام پریس کلب لاہور کے سامنے بلوچستان کے فارما سسٹوں کی کوئٹہ میں پرامن احتجاج کرنے پر تشدد اور150سے زیادہ فارما سسٹوں کی گرفتاریوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ نوجوان فارماسسٹ رہنما نور محمد مہر نے اپنے خطاب میں کہا کہ بلوچی فارماسسٹ بھائیوں کے ساتھ ہونے والے ظلم کی پرزور مذمت کرتے ہیں ۔بلوچستان کے غیور فارماسسٹوں کو فوری طور پر رہا کیا جائے ورنہ ہم روزانہ کی بنیاد پر ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے۔ سپریم کورٹ آف پاکستان2007 ؁ء کے حکم نامے کے باوجود تمام صوبوں میں فارماسسٹوں کے حقوق یا مال کیے جارہے ہیں وقت کی ضرورت ہے کہ ہر 50بیڈ کے ہر ہسپتال میں ایک کلینیکل فارماسسٹ فوری تعینات کیا جائے۔ تمام فارما سسٹوں کو پروفیشنل ہیلتھ الاؤنس اورنان پریکٹسنگ الاؤنس فوری طور پر دیا جائے ۔ فور ٹائر سروس سٹرکچر کے اصولوں پر فوری طورپر عمل درآمد کرایا جائے۔ ڈاکٹر حنا شوکت اور ڈاکٹر ہارون یوسف نے اپنے خطاب میں مطالبہ کیا ہے۔ بلوچستان کے وزیر فوری استعفیٰ دیں۔ پنجاب میں چھ ہزارخیبر پختون خواہ میں چار ہزار سندھ میں پانچ ہزار اور بلوچستان میں دو ہزار بے روزگار فارماسسٹوں کو فوری طور پر خالی آسامیوں پر تعینات کیا جائے۔۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -