عمران خان کو یوم تشکر نہیں یوم رسوائی منانا چاہیئے تھا، حیدر ہوتی

عمران خان کو یوم تشکر نہیں یوم رسوائی منانا چاہیئے تھا، حیدر ہوتی

  

بٹ خیلہ(بیورورپورٹ )عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدرسابق وزیراعلیٰ ممبرقومی اسمبلی امیرحیدرخان ہوتی نے کہاہے کہ ہم پنجاب کے خلاف نہیں اللہ پنجاب کولعل وجوہرات بنادیں وہ پنجابیوں کومبارک ہومگرپختونوں کے حقوق پرڈاکہ نہ ڈالاجائے انہوں نے کہاکہ جب تک افغانستان اورپاکستان کے مابین تعلقات کافقدان ہواس وقت تک نہ افغانستان کے مٹی پراورنہ پاکستان میں امن قائم ہوجائیگاسابقہ حکمرانوں نے 61سالوں میں صرف اور صرف نویونیورسٹیاں بنائی تھی ہم نے پانچ سالہ دورحکومت میں 72کالج اور10یونیورسٹیاں بناکرپختون قوم کے بچوں کوہاتھ میں قلم دیاہے گزشتہ الیکشن میں لوگ کمپین چلارہے تھے اورعوامی نیشنل پارٹی کے کارکن شہداء کے جنازے اٹھارہے تھے ہم نوازشریف سے بھی اپیل کرتے ہیں کہ وہ پختونوں کے مسائل کوحل کیاجائے کیونکہ پنجاب صرف پاکستان نہیں ہے عمران خان کویوم تشکرنہیں یوم رسوائی مناناچاہیے تھاان خیالاتا کااظہارامیرحیدرخان ہوتی نے گزشتہ روز بدرگہ میں ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پرمختلف سیاسی پارٹیوں کے سینکڑوں کارکن مستعفی ہوکرعوامی نیشنل پارٹی میں شامل ہوگئے انہوں نے کہاکہ پختون قوم کوایک پلیٹ فارم پرمتحدکرنا میرامقصد اورارمان ہے پاکستان اورافغانستان کے درمیان تعلقات کی فقدان کی وجہ سے افغانستا ن کے مٹی اورپاکستان میں کبھی امن قائم نہیں ہوجائیگاانہوں نے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان کامقصد پختونوں کے خدمت کرنانہیں صرف اورصرف وزیراعظم کے کرسی کے حصول کیلئے پنجاب میں سیاست کررہے ہیں انہوں نے کہاکہ اج صوبے کے لاکھوں قبائل کوسخت مشکلات کاسامناہے انہوں نے کہاکہ 2018کے الیکشن سے قبل قبائل کوخیبرپختونخوامیں شامل کیاجائے اگرپختون قوم ایک پلیٹ فارم پرمتحدہوئی اورصحیح طریقے سے مردم شماری ہوئی توخیبرپختونخواملک کادوسرابڑاصوبہ بن جائیگاانہوں نے کہاکہ ہم چین سے انے والے راہداری منصوبے کے خلاف نہیں پاکستان ہماراملک ہے پاکستان کے ترقی ہماری ترقی اورخوشحالی ہے وہ صرف اورصرف طریقہ کارکے خلاف ہے کیونکہ وہ صرف اورصرف پنجاب کوترقی دیناچاہتے ہیں پختونوں کیساتھ بھی زیادتی ہم کسی بھی صورت میں برداشت نہیں کریں گے انہوں نے کہاکہ عوام نے پی ٹی آئی کوتبدیلی کے نام پرووٹ دیاتھامگرعمران خان نے پختونخواکے عوام کوبھول کراقتدارکے حصول کیلے پنجاب میں سیاست کررہے ہیں انہوں نے کہاکہ پختونوں کے مسائل دھرنوں سے نہیں حل ہوسکتے ہے دھرنوں سے مزید ان کے مشکلات میں اضافہ ہوتاجارہاہے انہوں نے کہاکہ عمران کووفاداریاں پیش کرنے والے وزیراعلیٰ خیبرپختونخواپرویزخٹک کی ماضی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہے بے نظیر ،اصف علی زرداری اورافتاب احمدخان شیرپاؤ پربرے وقت انے پرانہوں نے ان کوچھوڑکرعمران خان کے ساتھ ہوگئے اگرعمران خان پربراوقت اگیا تووہ سب سے پہلے عمران خان کوچھوڑکرراہ فراراختیارکریں گے ،انہوں نے کہاکہ دوسروں کے ساتھ احتساب کرنے والے صوبائی حکومت کے خزانہ خالی ہوچکاہے تین ماہ بعدان کے ساتھ تنخواہوں کیلئے بھی پیسے نہیں ہونگے انہوں نے کہاکہ پاکستان بننے سے پختونخوامیں صرف اورصرف نویونیورسٹیاں تھے ہم نے پانچ سالہ دوراقتدارمیں 72 کالجوں سمیت 10یونیورسٹیاں قائم کی گئی ہے ۔انہوں نے کہاکہ گزشتہ الیکشن میں ہمیں دیوارسے لگایاگیاتولوگ کمپین چلارہے تھے اورہمارے کارکن شہداء کے جنازے اٹھارہے تھے۔انہوں نے کہا کہ پختونوں کی ترقی صرف اورصرف ایک پلیٹ فارم پرمتحد ہونے میں ہیں انہوں نے کہاکہ ہم ہزارہ یونیورسٹی میں سوات کے طالب علم کے قتل کرنے کی شدیدالفاظ میں مذمت کرتے ہیں اورمطالبہ کرتے ہیں کہ وہ سوات کے طالب علم کے قاتلوں کوفوری طورپرگرفتارکرکے احتجاج کرنے والے پختون سٹوڈنٹس فیڈریشن کے طلباء کوفوری طورپررہاکیاجائے ورنہ زبردست احتجاجی تحریک شروع کردیں گے۔انہوں نے کہاکہ ہم نوازشریف سے بھی اپیل کرتے ہیں کہ وہ پختونوں کے مسائل کوجلدازجلدحل کیاجائے کیونکہ صر ف اورصرف پنجاب پاکستان نہیں ہے ۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -