کابینہ سے مشاورت کے بغیر وزیراعظم کے فیصلوں کا معاملہ، وفاق کی نظر ثانی اپیل خارج، وزیراعظم کابینہ کو بائی پاس نہیں کرسکتے،سپریم کورٹ

کابینہ سے مشاورت کے بغیر وزیراعظم کے فیصلوں کا معاملہ، وفاق کی نظر ثانی اپیل ...
کابینہ سے مشاورت کے بغیر وزیراعظم کے فیصلوں کا معاملہ، وفاق کی نظر ثانی اپیل خارج، وزیراعظم کابینہ کو بائی پاس نہیں کرسکتے،سپریم کورٹ

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے کابینہ سے مشاورت کے بغیر وزیراعظم کے فیصلوں سے متعلق فیصلے کے خلاف نظر ثانی کی اپیل خارج کردی ہے، جسٹس ثاقب نے ریمارکس دیئے کہ آئین میں وزیراعظم کی سولو فلائٹ کی کوئی گنجائش نہیں۔ وفاقی حکومت کی نظر ثانی کی اپیل سپریم کورٹ میں ہوئی جس کے بعد عدالت عظمیٰ نے اسے خارج کردی۔ دوران سماعت جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے کہ رولز کبھی بھی آئین سے بالا تر نہیں ہوسکتے، آئین میں کہیں بھی وزیراعظم کی سولو فلائٹ کی گنجائش نہیں۔

مزید پڑھیں :کیپٹن صفدرنے سپریم کورٹ میں جواب جمع کرا دیا ، مریم نواز کی آف شور کمپنیوں سے انکار ، عمران خان کی درخواستیں خارج کرنے کی استدعا

حکومتی وکیل نے عدالت کے رو برو دلائل دیئے کہ حکومتی امور کے لئے مضبوط وزیراعظم کی ضرورت ہوتی ہے جس پر عدالت نے استفسار کیا کہ کیا وزیراعظم کابینہ کی منظوری کے بغیر جو چاہے کرسکتا ہے؟کہیں نہیں لکھا کہ وزیراعظم یا کوئی وزیر تنہا ہی وفاقی حکومت ہے لہذا وزیراعظم کابینہ کو بائی پاس نہیں کرسکتے۔عدالت عظمی نے ٹیکس استثنی اور لیوی ٹیکس کو وفاقی حکومت کا اختیار قرار دیتے ہوئے نظر ثانی اپیل خارج کردی۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -