پانامہ لیکس کے بارے میں وہ ایک سوال جس نے حسین نواز کو شدید پریشان کر دیا

پانامہ لیکس کے بارے میں وہ ایک سوال جس نے حسین نواز کو شدید پریشان کر دیا
پانامہ لیکس کے بارے میں وہ ایک سوال جس نے حسین نواز کو شدید پریشان کر دیا

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ میں پانامہ لیکس کی سماعت شروع ہونے کے بعد حکومت جہاں تمام دھبے صاف کرنے کے دعوے کر رہی ہے وہیں اپوزیشن خوشیاں منا رہی ہے کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار کسی وزیراعظم کا احتساب ہونے جا رہا ہے۔

ٹیلی نار اور بیکن ہاﺅس نے مل کر گینز ورلڈ ریکارڈ بنا ڈالا

معروف صحافی شاہ زیب خانزادہ نے بھی اسی تناظر میں ایک پروگرام کیا جس میں انہوں نے حسین نواز سے 4 اپریل کو کئے گئے انٹرویو کی ویڈیو چلائی جس میں انہوں نے اثاثوں کی تفصیلات پوچھے جانے پر شاہ زیب خانزادہ کے سوال کو ”غیر اخلاقی“ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ کسی بھی کاروباری شخص سے اس کے کاروبار سے متعلق سوالات پوچھنا بالکل غیر اخلاقی ہے۔ حسین نواز سے 4 اپریل کو کئے گئے انٹرویو میں ان سے کہا گیا کہ ”آپ وزیراعظم کے بیٹے ہیں اور یہ سوال بار بار اٹھے گا اس لئے واضح کریں گے کہ اس طرح سے کام کیا گیا اور پیسہ بنایا گیا۔“

اس پر حسین نواز نے کہا کہ ”میں معذرت چاہتا ہوں کیونکہ یہ ہمارے کاروباری معاملات ہیں اور ایسے سوالات پوچھنے بھی نہیں چاہئیں کیونکہ صحافتی لحاظ سے یہ بالکل غیر اخلاقی ہے کہ ایک کاروباری شخص کیساتھ ایسے سوالات کئے جائیں ۔ “ اس پر شاہ زیب خانزادہ نے کہا کہ بطور صحافی میں جانتا ہوں کہ غیر اخلاقی اور اخلاقی صحافت کیا ہوتی ہے اور میں آپ سے بطور بزنس مین نہیں بلکہ اپنے وزیراعظم کے بیٹے کے طو رپر سوال پوچھ رہا ہوں ۔

کیپٹن صفدرنے سپریم کورٹ میں جواب جمع کرا دیا ، مریم نواز کی آف شور کمپنیوں سے انکار ، عمران خان کی درخواستیں خارج کرنے کی استدعا

شاہ زیب خانزادہ نے 4 اپریل کی یہ ویڈیودوبارہ اپنے پروگرام میں چلانے کے بعد کہا ہے کہ اب تو عدالت نے صاف الفاظ میں کہہ دیا ہے کہ شریف فیملی کو پیر کو جواب لازمی جمع کرانا ہو گا ورنہ پانامہ لیکس میں سامنے آنے والی معلومات کو ہی درست سمجھا جائے گا کہ جو چھپ گیا وہی رست ہے۔ کمیشن کے قیام پر تو دونوں فریقین نے اتفاق کر لیا ہے لیکن کیا ٹی او آرز پر بھی اتفاق ہو گا؟ کیا سپریم کورٹ جو کہے گا وہ حتمی ہو گا یا سپریم کورٹ ان دونوں سے کہے گا آپ دونوں مل کر حل نکالیں یا پھر معاملہ پارلیمینٹ میں جائے گا۔

مزید :

لاہور -