مسافر طیارے کے ٹیک آف کے دوران رن وے پر صرف 19میٹر کی دوری پر پائلٹ کو اچانک راستے میں کھڑا ایک اور طیارہ نظر آگیا، پھر اس نے کیا کیا؟ جن لوگوں کو ہوائی سفر سے ڈر لگتا ہو وہ جواب بالکل نہ پڑھیں‎

مسافر طیارے کے ٹیک آف کے دوران رن وے پر صرف 19میٹر کی دوری پر پائلٹ کو اچانک ...
مسافر طیارے کے ٹیک آف کے دوران رن وے پر صرف 19میٹر کی دوری پر پائلٹ کو اچانک راستے میں کھڑا ایک اور طیارہ نظر آگیا، پھر اس نے کیا کیا؟ جن لوگوں کو ہوائی سفر سے ڈر لگتا ہو وہ جواب بالکل نہ پڑھیں‎

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) چائنیز ایئرلائن کے ایک پائلٹ نے گزشتہ دنوں طیارے کو خوفناک حادثے سے کچھ اس طرح بچایا کہ دنیا اس کی مہارت کی گرویدہ ہو گئی۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق ”ہی چاﺅ“ نامی پائلٹ شنگھائی ایئرپورٹ پر ایئربس اے320کو لے کر اڑان بھرنے کے لیے رن وے پر جا رہا تھا کہ اچانک سامنے ایک اور جہاز آ گیا۔ دونوں جہازوں کے درمیان صرف 19میٹر کا فاصلہ تھا کہ ہی چاﺅ نے حاضر دماغی اور مہارت سے کام لیتے ہوئے وہیں سے ٹیک آف کر دیا اور اس کا طیارے سامنے آنے والے جہاز سے چند فٹ کی بلندی سے گزر گیا۔

239 مسافروں سے بھرا جہاز بغیر پائلٹ اُڑتا ہوا سمندر میں جاگرا

رپورٹ کے مطابق اس طیارے میں 439مسافر سوار تھے جن کی جان ہی چاﺅ نے اپنی پیشہ وارانہ مہارت سے بچا لی تھی۔ چائنیز ایئرلائن کی طرف سے ہی چاﺅ کو 3لاکھ 60ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 4کروڑ 70لاکھ 51ہزار روپے) انعام کے طور پر دیئے گئے ہیں۔ہی چاﺅ کا کہنا تھا کہ جب دوسرا طیارہ میرے سامنے آیا تو میں اپنے جہاز کی رفتار کا اندازہ لگاتے ہوئے سمجھ گیا کہ اسے روکنا ناممکن ہے چنانچہ میں نے اس کی رفتار مزید بڑھاتے ہوئے ٹیک آف کا فیصلہ کیا۔“واقعے کی تحقیقات میں دو ایئرٹریفک کنٹرولز کو ذمہ دار ٹھہرا یا گیا ہے اور ان کے 13افسران کو سزا دی گئی ہے۔

ویڈیو بھی دیکھیں

مزید :

ڈیلی بائیٹس -