تحریک انصاف کے گرفتار 293کارکنوں میں سے 288کو رہا کردیا گیا ،ہائی کورٹ میں حکومتی رپورٹ

تحریک انصاف کے گرفتار 293کارکنوں میں سے 288کو رہا کردیا گیا ،ہائی کورٹ میں ...
تحریک انصاف کے گرفتار 293کارکنوں میں سے 288کو رہا کردیا گیا ،ہائی کورٹ میں حکومتی رپورٹ

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہورہائیکورٹ میںحکومت پنجاب کی طرف سے تحریک انصاف کے گرفتار کارکنوں کے حوالے سے رپورٹ پیش کی گئی کہ 293میں سے 281افراد کو رہا کردیا گیا ہے.

اس رپورٹ کے بعد مسٹر جسٹس شاہد حمید ڈار کی سربراہی میں قائم 3 رکنی فل بنچ نے گرفتاریوں کے خلاف دائر درخواست نمٹا دی ۔تحریک انصاف کے وکیل احمد اویس نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ عدالتی حکم کے باوجود 2نومبر کو موٹروے اور ملحقہ سڑکوں کو بند رکھا گیا۔ جس سے کارکنوں کو اسلام آباد پہنچنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ایڈووکیٹ جنرل پنجاب شکیل الرحمن خان نے تحریک انصاف کے گرفتار کارکنوں کی عدالتی حکم پر رہائی سے متعلق رپورٹ عدالت میں پیش کردی۔انہوں نے عدالت کو آگاہ کیا کہ86 مقدمات میں پنجاب بھر سے 293کارکنوں کو فوجداری الزامات کے تحت گرفتار کیا گیا تھا\ جن میں سے 281کی رہائی عمل میں آ چکی ہے۔

11گرفتار افراد اس وقت سیالکوٹ اور ایک کارکن میانوالی جیل میں بند ہے جنہیں قانونی تقاضے پورے کر کے رہا کر دیا جائے گاجس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ سڑکوںسے رکاوٹیں ہٹانے کے حوالے سے وفاقی وزیر داخلہ عدالتی حکم پر عمل درآمد کی یقین دہانی کراتے رہے مگربادی النظر میں اس حوالے سے سیاسی مصلحت سے کام لیا گیا،عدالت نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کی رپورٹ کی روشنی میں درخواست نمٹا دی۔

مزید :

لاہور -