'ILLUMINATI'آپ نے دنیا کے طاقتور ترین لوگوں کے اس گروپ کے بارے میں افواہیں تو سنی ہوں گی لیکن اب پہلی مرتبہ اس کا ایک ممبر منظر عام پر آگیا، ایسی تفصیلات بیان کردیں کہ دنیا حیران پریشان رہ گئی

'ILLUMINATI'آپ نے دنیا کے طاقتور ترین لوگوں کے اس گروپ کے بارے میں افواہیں تو سنی ...
'ILLUMINATI'آپ نے دنیا کے طاقتور ترین لوگوں کے اس گروپ کے بارے میں افواہیں تو سنی ہوں گی لیکن اب پہلی مرتبہ اس کا ایک ممبر منظر عام پر آگیا، ایسی تفصیلات بیان کردیں کہ دنیا حیران پریشان رہ گئی

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا کے طاقتور ترین خفیہ گروپ ”الومناتی“ (illuminati)کے بارے میں بہت افواہیں آتی رہی ہیں لیکن پہلی بار اس گروپ کا ایک رکن منظرعام پر آ گیا ہے جس نے ایسے انکشافات کیے ہیں کہ دنیا دنگ رہ گئی ہے۔ برطانوی اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق خفیہ سوسائٹی کے اس مبینہ رکن نے انٹرنیٹ پر ایک پوسٹ میں بتایا ہے کہ ”مجھے 19سال کی عمر میں اس گروپ میں شامل کیا گیا تھا اور 47سال اس کے ساتھ رہنے پر اب نکال دیا گیا ہے۔“ اس نے انکشاف کیا ہے کہ ”صدر اوباما اس گروپ کا رکن نہیں ہے لیکن عالمی رہنماءتیسری عالمی جنگ کی تیاریاں کر رہے ہیں اور اس کے لیے زیرزمین بنکرز بنا رہے ہیں۔ حتیٰ کہ امریکی ریاست کولوریڈو کے ڈینور ایئرپورٹ کے نیچے بھی ایٹمی حملے سے بچنے کے لیے بنکرز بنائے گئے ہیں۔پوری دنیا میں اس طرح کے 439بنکرز ہیں۔ یہ تمام بنکرز الومیناتی گروپ کے کنٹرول میں ہیں۔سب سے بڑا بنکر برازیل کے شہر ساﺅپاﺅلو میں ہے جس میں 5ہزار سے زائد لوگوں کے پناہ لینے کی گنجائش ہے اور ان کے لیے یہاں 10سال تک کا سازوسامان موجود ہے۔ میں ذاتی طور پر اس بنکر میں جا چکا ہوں۔ یہ اس سے کہیں بڑا ہے جتنا آپ میں سے کوئی خیال کر سکتا ہے۔یقینا یہ بنکر دنیا کے خاتمے کے دن محفوظ رہنے کے لیے بنایا گیا ہے۔اگر دنیا ایٹمی جنگ لڑتی ہے یا کوئی قدرتی تباہی آتی ہے جس سے انسانیت کو خطرہ ہو تو دنیا کے امیر ترین اور طاقتور ترین 5ہزار افراد اس بنکر میں پناہ لیں گے۔“

فرعون کی قبر پر لکھی 3800 سال پرانی وہ تحریر جسے دیکھ کر سائنسدان بھی حیرت سے ایک دوسرے کے منہ تکنے لگے

خفیہ گروپ کے اس مبینہ رکن نے دعویٰ کیا ہے کہ ”دنیا کی تمام بڑی شخصیات لیون ٹروٹسکی، ابراہم لنکن، صدام حسین و دیگر جنگ کے وقت ان بنکرز میں رہتے تھے۔“اس رکن نے تصدیق کی کہ ”1969ءمیں چاند پر جانے والا مشن حقیقی تھا اور وہ واقعی چاند پر گیا تھا لیکن ا س سے 7سال قبل بھی ایک مشن چاند پر جا چکا تھا اور یہ روسی باشندے تھے جو سب سے پہلے چاند پر گئے۔“ پوسٹ میں یہ بھی انکشاف کیا گیا ہے کہ ”الومیناتی سوسائٹی سورج کو بند (Shut off)کرنے کا طریقہ بھی ڈھونڈ چکی ہے اور ”ہائی فریکوئنسی ارورل ریسرچ پروگرام“ (High Frequency Auroral Research Program)(HAARP)کو بطور موسمی ہتھیار استعمال کر رہی ہے۔ یہ ادارہ بحرالکاہل کی تہہ میں موجود ہے۔ آپ سب نے HAARPمشین کے بارے میں تو سن رکھا ہو گا۔ میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ یہ بالکل سچ ہے۔“اس مبینہ رکن نے مزید انکشاف کیا ہے کہ ”روسی صدر ولادی میرپیوٹن الومیناتی گروپ کے رکن ہیں اور ایشیاءان کے کنٹرول میں ہے۔1918ءمیں آنے والا سپینش فلو، سارس اور برڈ فلو جیسی حالیہ وبائی امراض اسی سوسائٹی کی پیدا کردہ ہیں۔“ رپورٹ کے مطابق اس رکن نے Stevestig76کے نام سے سماجی رابطے کی ویب سائٹ imgurپر یہ انکشافات پوسٹ کیے ہیں۔ واضح رہے کہ اس خفیہ سوسائٹی کی علامت ایک آنکھ والا اہرام مصر کی طرح کا ہرم ہے جس کی تصویر امریکی ڈالر پر دیکھی جا سکتی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -