آزادی مارچ کا حصہ‘ پیپلز پارٹی دھرنے سے دور رہے گی‘ بلاول بھٹو 

  آزادی مارچ کا حصہ‘ پیپلز پارٹی دھرنے سے دور رہے گی‘ بلاول بھٹو 

  



بہاولپور‘ نورپور نورنگا،اوچشریف (بیورو رپورٹ‘ ڈسٹرکٹ رپورٹر‘ نامہ نگار)پاکستانی عوام سمجھتی ہے کہ حکومت نے کشمیرکاسودا کردیاہے حکومت کوفارن پالیسی پرغورکرناچاہیے کشمیریوں کاسفیربننے والا سلیکٹیڈ وزیراعظم کرتارپورراہداری کھول کر کیاپیغام دے رہاہے پی پی پی کورکمیٹی کے فیصلہ کے مطابق دھرنے میں شرکت نہیں کریگی عوام کاخیال صرف اورصرف منتخب حکومت ہی رکھ سکتی ہے ان خیالات کااظہار پاکستان پیپلزپارٹی کے چیرمین بلاول بھٹو زرداری نے گذشتہ روز سانحہ تیزگام کے زخمیوں کی عیادت کیلئے(بقیہ نمبر47صفحہ12پر)

 بہاول وکٹوریہ ہسپتال میں آمد پر صحافیوں سے گفتگوکرتے ہوئے کیاانہوں نے کہاکہ سانحہ تیزگام بہت بڑا سانحہ ہے اس کی غیرجانبدارانہ تحقیقات ہونی چاہیے اوراسکے زمہ داران کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائے انہوں نے کہاکہ سانحہ تیز گام پر وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کوفوری استعفی دیدیناچاہیے انہوں نے کہاکہ سلیکٹیڈحکومت ہرمحاذ پرفیل ہوچکی ہے مہنگائی بے ر وزگاری نے عوام کاجینادوبھرکردیاہے حکومت نے سارا بوجھ عوام پرڈال دیاہے مولانافضل الرحمان نے یہ نہیں کہا کہ وہ وزیراعظم کوبنی گالا سے نکال کرگھیسٹے گے بلکہ انہوں نے کہاکہ لاکھوں کی تعدادمیں موجود عوام اس کونکال کراستعفیلے گی  ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ پاکستان پیپلزپارٹی نے جلسہ میں شرکت کی ہے دھرنے میں شرکت نہیں کریگی کیونکہ پی پی پی کورکمیٹی کافیصلہ ہے اگرکورکمیٹی فیصلہ کرتی ہے کہ موجودہ پالیسی تبدیل کریں تو اس مطابق عمل کریں گے اس موقع پر سابق وزیراعظم سیدیوسف رضا گیلانی، مخدوم سید احمدمحمود,ممبر فیڈرل کونسل پی پی پی عبدالقادر شاہین،سینئر نائب صدر جنوبی پنجاب خواجہ رضوون عالم، نوازش پیرزادہ، ارشاد احمد سرویا،راو ± ساجد علی اور ملک شاہ محمد چنڑ،کلیم اللہ ایڈوکیٹ، ملک امتیاز چنڑ، عاصم عباسی،ودیگربھی موجودتھے قبل ازایں بلاول بھٹوزرداری نے سرجیکل ون میں سانحہ تیزگام کے زخمیوں کی عیادت کی بلاول بھٹوزرداری آج بہاول پورمیں قیام کریں گے اور کل بروز سوموار اوچ شریف میں ورکرزکنونشن سے خطاب کریں گے۔ چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے میڈیاسے گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ موجودہ حکومت ہرمحاذ پرناکام ہوچکی ہے ملکی معیشت تباہ اورسیاست بھی نہیں چلاسکی۔ عمران خان کی حکومت الیکٹ ہونے کی بجائے سلیکٹڈ حکومت ہے اگریہ عوام کے ووٹوں سے حکومت بنی ہوتی توعوام کاضرورخیال رکھتی نااہل حکومت کی وجہ سے پورے ملک کانقصان ہورہاہے حکومت نے اپنی ناکامی کابوجھ عوام پرپٹرول، بجلی، گیس اورکھانے پینے کی اشیا کی مہنگائی کرکے ڈال دیاہے ایک سوال کے جواب میں بلاول بھٹوزرداری نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان کو زبردستی کرسی سے ہٹانے کا فضل الرحمن کابیان سیاسی بیان بھی ہوسکتاہے انہوں نے اسلام آبادمیں جمع عوام کے جوش وجذبہ کودیکھ کر یہ بیان دیاتھا کہ عوام انہیں زبردستی وزیراعظم کی سیٹ سے ہٹادیں گے انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی آزادی مارچ کا حصہ ہے لیکن دھرنے کا حصہ نہیں ہونگے اگر عدلیہ میڈیا اور دیگر اداروں پر پابندی لگائی جائے گی تو پیپلز پارٹی اپنا احتجاج کا حق محفوظ رکھتی ہے حکومت سلیکٹڈ ہو کر آئی ہے یہ حکومت کسی اور کی سازش کا نتیجہ ہے نااہل نالائق حکومت کا بوجھ ہم کیوں اٹھائیں۔۔  بی وی ایچ میں اپنے پیاروں کی شناخت کیلئے آنے والے سندھ کے شہری نے بلاول بھٹو زرداری کی پریس کانفرنس کے بعد میڈیاکے سامنے احتجاج کرتے ہوئے کہاکہ ہم اپنے پیاروں کی تلاش میں سندھ سے بہاول پورآئے لیکن یہاں آکر ہمیں سخت مسائل کاسامناہے بلاول بھٹو زرداری بی وی ایچ آیابھی تو ہم سے چندقدم کے فاصلہ سے ہوکرگزرگیاہم اس کوآوزیں دیتے رہے لیکن اس نے نہ سنی،ہم نے ان کے نانا ان کی ماں کیلئے قربانیوں دی،ہم کسی اورسے کیاگلہ کریں ہمارے تواپنے ہی ہمارادامن چاک کرگئے ہم سات سگے بھائی دومیرے بیٹے، دوبھانجے،دوبھتیجے سمیت14 افراد بی وی ایچ میں بیٹھے ہیں لیکن کوئی پرسان حال نہیں ہے میراڈی این اے لے کربھی مجھے کبھی ملتان،لیاقت پور،رحیم یارخان، کھاریاں بھیجاجاتاہے لیکن کہیں بھی کوئی شنوائی نہیں ہورہی ہے۔

بلاول بھٹو 

مزید : ملتان صفحہ آخر