28ویں میلاد ریلی‘ شرکاء پر پھولوں کی پتیاں نچھاور‘ جگہ جگہ استقبال 

    28ویں میلاد ریلی‘ شرکاء پر پھولوں کی پتیاں نچھاور‘ جگہ جگہ استقبال 

  



ملتان (سٹی رپورٹر)مرکز ی میلاد کمیٹی شاہ رکن عالم کالونی ملتان کے زیر اہتمام 28ویں سالانہ میلاد ریلی کا انعقاد کیا گیا ،فضا درود و سلام سے گونج اٹھی میلاد ریلی میں مختلف مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد کے علاوہ علماء کرام سماء سیاسی مذہبی شخصیات نے کثیرتعداد میں شرکت کی۔28ویں سالانہ میلاد ریلی میلاد چوک شاہ رکن عالم سے شروع ہو کر گلشن مارکیٹ، مدنی چوک، چوک کمہاراں رحیم چوک (بقیہ نمبر30صفحہ12پر)

سے ہوتے ہوئے حضرت ابوبکر مسجد گلشن مارکیٹ میں اختتام پذیر ہوئی۔ جشن عید میلاد النبی کے سلسلے میں نکالی گئی میلاد ریلی کے قائدین اور شرکاء کا جگہ جگہ استقبال اور دستار بندی کی گئی جبکہ شرکاء کا پھولوں کی پتیا ں نچھاور کرکے استقبال کیا گیا ریلی میں اونٹ ریڑھی، گدھا ریڑھی، رکشاء، ٹرک، کاروں سائیکلوں موٹر سائیکلوں سمیت مختلف ٹرا نسپسورٹ پر شرکاء موجود تھے جس میں سماجی سیاسی مذہبی شخصیات سمیت مختلف سکولوں دینی مدارس کے طالب علمو ں سمیت رکن الدین ندیم حامدی،مشیر وزیراعلیٰ پنجاب حاجی جاویداختر انصاری،صدر متحدہ میلاد کونسل مرزاارشدالقادری،راؤ عبدالقیوم شاہین،چوہدری شہزاد فیصل ارائیں،حاجی محمد رفیق، شیخ عمران ارشد،حامد ارائیں،اختر عالم قریشی،راؤ محمد عارف رضوی،حافظ منظور الہی،ثمرحامدی،ساجد قادری۔،حاجی شیخ رفیق احمد،حامد ارائیں،میجر محمد اقبال چغتائی،یاسر ارشادقاری حنیف انصاری،پیر افضل فرید چشتی،قاری توفیق حامدی،کامران عالم نقشبندی،حافظ ظفر قریشی،علامہ امیرا ظہر سعیدی،علامہ عبدالرزاق حامدی،پیر افضل فرید چشتی،حافظ راؤ شرافت علی،رانا فہیم،محمداکرم پنڈا،مقبول الہی قریشی،ڈاکٹر طیب ملک،انجینئر نصرت خان،رانا لقمان شہزاد،رانا جنگ شیر علی،چوہدری اکرم گجر نمبردار،سجاد نقشبندی،قاری الطاف،عارف سلطانی،مفتی سعیداختر،انجینئر فخرالاسلام بھٹہ،اشفاق ندیم ایڈووکیٹ،علامہ شاہد اسلام قمری، سمیت ہزاروں عشاقانِ رسول نے شرکت کی۔ ریلی کے راستے میں شہریوں نے جگہ جگہ دودھ، پانی کی سبیلیں لگائیں اور لنگر تقسیم کیا گیا ا موقع پر خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہاہے کہ حضرت محمد ^ تمام عالمین کے لئے رحمت بن کر آئے اور رہتی دنیا تک جامع ترین ضابطہ حیات عطا فر ما یا جس پر عمل پیرا ہو کر ہم دنیا وآخرت کی کا میابیاں حاصل کر سکتے ہیں انہوں نے کہاہے کہ اسلام امن و سلامتی کا مذہب ہے انہوں نے کہاہے کہ امن وسلامتی کا حصول صرف اور صرف پیغمبر اسلام کے دامن سے وابستگی سے ہی ممکن ہے۔پیغمبر اسلام کا امتی کبھی دہشت گردی اور انتہا پسندی میں ملوث نہیں ہوسکتا۔میلادالنبی^ کے زریعے محبتوں کے پیغام کو عام کیا جاسکتا ہے۔

جگہ جگہ استقبال

مزید : ملتان صفحہ آخر