تعلیمی نظام بہترکئے بغیر کسی بھی شعبے میں انقلاب نہیں آئیگا‘ پروفیسر اطلس

    تعلیمی نظام بہترکئے بغیر کسی بھی شعبے میں انقلاب نہیں آئیگا‘ پروفیسر ...

  



سرائے نورنگ(نمائندہ پاکستان)یونیورسٹی آف سائنس اینڈٹیکنالوجی بنوں کے سابق کنٹرولرامتحانات پروفیسراطلس خان نے کہاہے کہ تعلیمی نظام بہترکئے بغیر کسی بھی شعبے میں انقلاب نہیں آئیگا امتحانی نظام میں نقل کی روک تھام سے تمام شعبے ترقی کی راہ پرگامزن ہوجائیں گے‘ان خیالات کااظہاراُنہوں نے گذشتہ روزیہاں نورنگ میں جان انگلش اکیڈیمی میں منعقدہ تقریب”سرکاری سکولوں اورپرائیوٹ سکولوں کی تعلیمی موازنہ“ کے سلسلے میں بطورمہمان خصوصی خطاب کیا اس موقع پرجان انگلش اکیڈیمی کے سرپرست اعلیٰ احمدجان،پروفیسربخت علی شاہ،الیکچرارجلیل خان اورملک یاسرخان نے بھی خطاب کیااس موقع پرجان انگلش اکیڈیمی کے طلباء نے سرکاری سکولوں اورپرائیویٹ سکولوں کی تعلیمی موازنہ کے حوالے سے انگلش میں تقاریرکیں مقررین کاکہناتھاکہ آج جتنے ممالک ترقی کی راہ پرگامزن ہے اُن ممالک میں تعلیمی شرح سوفیصدہے اُنہوں نے کہاکہ طلباء کوچاہئے کہ اپنی تمام ترتوجہ تعلیم پرمرکوزرکھیں کیونکہ آنے ولے دنوں میں ملک کی بھاگ دوڑان ہی نے سنبھالنی ہے اُنہوں نے کہاکہ بدقسمتی سے پاکستان کے تعلیمی نظام میں روزبروزنقل کے رجحان میں اضافہ ہوتاجا رہا ہے جس کی وجہ سے طلباپڑھائی لکھائی کے بجائے نقل جیسے ناسور کوزیادہ ترجیح دیتے ہیں جس سے معاشرے پرمنفی اثرات مرتب ہوئے ہیں،مقررین نے تحصیل نورنگ جیسے پسماندہ علاقے میں ”جان انگلش اکیڈیمی“کا قیاخوش آئند قدام ہے اورسرپرست اعلیٰ احمدجان کی خدمات کوخراج تحسین پیش کی،تقریب کے اختتام پرمہمان خصوصی نے تقاریرکے مقابلوں میں نمایاں پوزیشن لینے والے طلباء میں انعامات تقسیم کئے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر