طالبہ فلزا نور کیس میں انصاف دلایا جائے‘ محمد غنی

طالبہ فلزا نور کیس میں انصاف دلایا جائے‘ محمد غنی

  



بخشالی(نمائندہ پاکستان) اقراء بخشالی سکول بس سے گرنے سے جاں بحق ہونیوالی پانچ سالہ نرسری جماعت کی طالبہ فلزانور کے کیس میں ہمیں انصاف دیا جائے، بس ڈرائیور اور کنڈیکٹر کے ساتھ سکول پرنسپل کو بھی شامل تفتیش کیا جائے، بخشالی کیمپس کو فلزانور کے نام سے منسوب کرنے کا بھی مطالبہ کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق بخشالی محتسب بابا کے رہائشی محمد غنی اور ذاکر علی نے پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ گزشتہ دنوں سکول چھٹی کے بعد اقراء بخشالی سکول کے بس میں سوار میری پانچ سالہ بیٹی نرسری جماعت کی طالبہ فلزا نور نیچے روڈ پرگرنے سے جان بحق ہوچکی تھی جس کے بعد سکول بس کے ڈرائیور اور کنڈیکٹر نے جھوٹا بیان دیا کہ یہ بچی نامعلوم موٹر کار کی ٹکر سے جان بحق ہوچکی ہے جو بیان سراسر جھوٹ ہے حقیقت یہ ہے کہ بس میں خفاظتی انتظامات نہ ہونے کی وجہ سے پانچ سالہ بچی نیچے روڈ پر گر چکی ہے انہوں مطالبہ کیا کہ ہمیں جلد از جلد انصاف فراہم کر نے کے ساتھ ساتھ مذکورہ کیس میں سکول پرنسپل عاشق حسین کو بھی شامل تفتیش اور سکول کو فلزا نور کے نام سے منسوب کیا جائے۔۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر