لیوی اور سیلز تیکس ختم کر کے پٹرول کی قیمتوں میں کمی کی جائے: پیاف

       لیوی اور سیلز تیکس ختم کر کے پٹرول کی قیمتوں میں کمی کی جائے: پیاف

  



لاہور (آن لائن)ناصر حمید خان قائم مقام چیئرمین  پاکستان انڈسٹریل اینڈ ٹریڈرز ایسوسی ایشنز فرنٹ (پیاف) نے پٹرول کی قیمت میں 1روپے  فی لیٹر اضافہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے انڈسٹری پر بوجھ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ کے بعد صنعتی شعبہ کے ٹرانسپورٹیشن اخراجات بڑھیں گے جس کا لازمی اثر اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ کی صورت میں نکلے گا جس سے مہنگائی میں  مزید اضافہ ہوگا، اس لیے حالیہ اضافہ فی الفور واپس لیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے تاجروں و صنعتکاروں کے مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ناصر حمید نے کہا کہ عالمی منڈی میں تیل کی مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے باوجود پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانا بھی زیادتی ہے، قیمتون میں ہونے والاذرا سا اضافہ بھی ملٹی پلائر افیکٹ کی وجہ سے پیداواری لاگت بڑھا دیتا ہے اس سے بزنس کمیونٹی اور عام آدمی کی مشکلات اور بڑھ جائیں گی۔ناصر حمید خان نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ سے حکومت کو وقتی طور پر تو ریونیو حاصل ہوجائے گا لیکن اس کے مستقبل میں منفی اثرات مرتب ہونگے۔ پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ سے انڈسٹری کی پیداواری لاگت بڑھے گی اور اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ہوگا اور مہنگی اشیاء کے باعث بیرون ملک پاکستانی مصنوعات کی مانگ میں کمی کے باعث ملکی برآمدات میں جو پہلے ہی تنزلی کا شکار ہیں مزید کمی سے حکومت کے زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی کے ساتھ ساتھ تجارتی خسارہ میں اضافہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات پر پٹرولیم لیوی ٹیکس اور سیلز ٹیکس کا خاتمہ کرکے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی جائے تاکہ ہوشربا مہنگائی میں عوام کو ریلیف حاصل ہو۔ 

مزید : کامرس