پنگریو، فہمیدہ مرزا کے زرعی فارم اور بنگلے پر مسلح افراد کاقبضہ 

  پنگریو، فہمیدہ مرزا کے زرعی فارم اور بنگلے پر مسلح افراد کاقبضہ 

  



پنگریو (این این آئی) پنگریو کے قریب دیہہ سینہاو میں واقع وفاقی وزیر ڈاکٹر فہمیدہ مرزا اورسابق وزیرداخلہ سندھ ڈاکٹر ذوالفقار علی مرزاکے گیارہ سوایکڑ پرمشتمل زرعی فارم اوربنگلے پر مختلف گاڑیوں میں آنے والے جدیداسلحہ سے لیس ایک سو کے قریب مسلح افرادنے قبضہ کرلیا اوربنگلے۔زرعی فارم کے متعدد مقامات پرمورچے قائم کرلیے مسلح افراد نے فارم کے بنگلے میں سوئے ہوئے چارملازمین کو یرغمال بنا لیا اورفارم کے گردمختلف راستوں پر ناکے لگا کر راستے سیل کردیے اطلاع ملنے پرایس ایچ او پنگریو کی سرکردگی میں پولیس نفری موقع پرپہنچی اوریرغمال بنائے جانے والے ملازمین کو بازیاب کرالیاتاہم پولیس نے مسلح قابضین کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی۔دریں اثنا وفاقی وزیر بین الصوبائی رابطہ ڈاکٹرفہمیدہ مرزا نے اپنے فارم ہاوس پر قبضے کے حوالے سے وفاقی حکومت سے بھی رابطہ کیا ہے اوروفاقی حکومت سے اس معاملے پرمدد طلب کرلی ہے۔

فہمیدہ کافارم ہاؤس 

اسلام آباد (آئی این پی) وفاقی وزیر برائے بین الصوبائی رابطہ ڈاکٹر فہمیدہ مرزا نے کہا ہے کہ ٹنڈو بھاگو، یوسی خان شاہ میں بشارت زرداری کی سرپرستی میں ڈیڑھ سو سے دو سو مسلح افرادنے خوف وحراس پھیلاتے ہوئے ان کی ایگریکلچر لینڈ پرقبضہ کرلیا ہے، بشارت زرداری نامی شخص نے اپنے اثر ورسوخ اور بدمعاشی سے ہاریوں کو تشدد کا نشانہ بنایا ہے اوروہاں لوگوں کوہراساں بھی کیا جارہا ہے،ان مسلح افراد کا تعلق پنگریو شوگر مل سے ہے۔انہوں نے کہا کہ اس ضمن میں ایف آئی آربھی درج کرائی جاچکی ہے اور ضلعی انتظامیہ تماشائی بنی کھڑی ہے۔

فہمیدہ مرزا 

مزید : صفحہ آخر