اسلام آباد ہائیکورٹ نے جج ویڈیو سکینڈل کیس میں حکم امتناع میں7 نومبرتک توسیع کر دی

اسلام آباد ہائیکورٹ نے جج ویڈیو سکینڈل کیس میں حکم امتناع میں7 نومبرتک توسیع ...
اسلام آباد ہائیکورٹ نے جج ویڈیو سکینڈل کیس میں حکم امتناع میں7 نومبرتک توسیع کر دی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے جج ویڈیو سکینڈل کیس میں حکم امتناع میں7 نومبرتک توسیع کر دی،جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیئے کہ دیکھنا ہے نئی دفعات کے بعد عدالتی دائرہ اختیار کا تعین کس عدالت نے کرناہے؟

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ میںایف آئی اے کی جانب سے مقدمہ انسداد دہشتگردی کی عدالت منتقل نہ کرنے کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی، جسٹس عامرفاروق نے ایف آئی اے کی درخواست پرسماعت کی،وفاق کی جانب سے ڈپٹی اٹارنی جنرل طیب شاہ عدالت میں پیش ہوئے ، وکیل ملزمان نے سماعت پر اعتراض اٹھایا کہ جہاں عبوری چالان جمع ہوا،مقدمے کی منتقلی اوراختیارسماعت کا فیصلہ اسی عدالت نے کرنا ہے، جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیئے کہ ملزمان مہرغلام جیلانی اور خرم شہزاد کو غلط ایڈریس کے باعث نوٹس کی تعمیل نہیں ہو سکی،عدالت میں عبوری چالان آنے کے بعد دہشتگردی کی نئی دفعات کا اضافہ کیا گیاہے،دیکھنا ہے نئی دفعات کے بعد عدالتی دائرہ اختیار کا تعین کس عدالت نے کرناہے؟ اسلام آباد ہائیکورٹ نے انسداد الیکٹرانک کرائم عدالت میں جج وڈیو کیس پرحکم امتناع میں7 نومبرتک توسیع کر دی۔

مزید : قومی