بارش کے باعث یقینی کامیابی سے محروم آسٹریلوی کپتان آئی سی سی برہم مگر کیوں؟ جان کر آپ بھی بے اختیار کہہ اٹھیں” ہم آپ کا دکھ سمجھ سکتے ہیں“

بارش کے باعث یقینی کامیابی سے محروم آسٹریلوی کپتان آئی سی سی برہم مگر کیوں؟ ...
بارش کے باعث یقینی کامیابی سے محروم آسٹریلوی کپتان آئی سی سی برہم مگر کیوں؟ جان کر آپ بھی بے اختیار کہہ اٹھیں” ہم آپ کا دکھ سمجھ سکتے ہیں“

  



سڈنی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کیخلاف پہلے ٹی 20 میں جیت کا موقع ہاتھ سے نکلنے پر آسٹریلین کپتان ایرون فنچ نے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) قوانین پر ہی اعتراض اٹھا دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق آسٹریلیا اور پاکستان کے درمیان پہلا ٹی 20 میچ بارش کی نذر ہوا جس میں میزبان سائیڈ نے گرین شرٹس کو 15 اوورز میں 107 رنز 5 وکٹ پر محدود رکھا اور ڈک ورتھ لوئس قانون کے تحت کامیابی کیلئے انہیں 119 رنز کا ہدف دیا گیا۔

آسٹریلین ٹیم نے ہدف کے تعاقب میں دھواں دار بلے بازی کرتے ہوئے 3.1 اوورز میں بغیر کسی نقصان کے 41 رنز بنا لئے تھے کہ بارش کے باعث میچ روک دیا گیا۔ کپتان ایرون فنچ نے دھواں دار بلے بازی کرتے ہوئے 37 رنز جوڑے اور میچ میں مضبوط پوزیشن کے باوجود خالی ہاتھ رہنے پر کافی برہم دکھائی دئیے۔

میچ کے بعد گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ یہ واقعی ہمارے لئے کوفت کا باعث ہے، 2 اننگز کے درمیان 20 منٹ کا وقفہ اچھی چیز ہے لیکن جب آپ چند اوورز کھو چکے ہوں اور پھر بھی 20 منٹ کا وقفہ دیا جائے تو یہ اور بھی زیادہ دلچسپ ہے، اگر آپ میچ کے اوورز میں کٹوتی کرتے ہیں تو پھر میرے نزدیک بدستور 20 منٹ کے وقفے کی کوئی منطق نہیں ہے، بہرحال یہ قوانین کا حصہ ہے اور آپ اس حوالے سے زیادہ کچھ نہیں کرسکتے۔

ایرون فنچ کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے اس مقابلے میں بہت اچھا پرفارم کیا، حریف سائیڈ کو 15 اوورز میں 107 رنز تک محدود رکھنا بلاشبہ ایک اچھی کاوش تھی اور پھر ہم کامیابی کی راہ پر گامزن تھے، بہرحال آپ کو اس کیلئے کچھ قسمت بھی درکار ہوتی ہے، اچھی بات یہ ہے کہ پچ پر کچھ وقت گزارنے کا موقع ملا لیکن جیسا کہ میں نے کہا کہ بدقسمتی سے بارش نے اپنا کھیل کھیلا۔

واضح رہے کہ پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان ٹی 20 سیریز کا دوسرا میچ منگل کو کینبرا میں کھیلا جائے گا جبکہ آخری میچ پرتھ میں شیڈول ہے، اس کے بعد دونوں ٹیموں کے درمیان 2 ٹیسٹ میچز کی سیریز کھیلی جائے گی۔

مزید : کھیل