”ٹاپ سکورر بننا ہدف ہے لیکن۔۔۔“ اسد شفیق نے دبنگ اعلان کر دیا

”ٹاپ سکورر بننا ہدف ہے لیکن۔۔۔“ اسد شفیق نے دبنگ اعلان کر دیا
”ٹاپ سکورر بننا ہدف ہے لیکن۔۔۔“ اسد شفیق نے دبنگ اعلان کر دیا

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مڈل آرڈر بلے باز اسدشفیق نے آسٹریلیا کیخلاف ٹیسٹ سیریز میں پاکستان کا ٹاپ سکورر بننا ہدف بنا لیا ہے جن کا کہنا ہے کہ آسٹریلیا کا دورہ ہمیشہ مشکل ہوتا ہے لیکن وہاں کی کنڈیشنز کی حساب سے ہی تیاریاں کی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسد شفیق نے کہا کہ آسٹریلیا کا دورہ ہمیشہ مشکل ہوتا ہے اور وہاں ایشین ٹیموں کو ہر بار نئے چیلنج کا سامنا ہوتا ہے کیونکہ وکٹیں مختلف طرح کی ہوتی ہیں لیکن پروفیشنلزم یہی ہے کہ ہر طرح کی صورتحال میں جاکر کھیلیں۔

33 سالہ بلے باز نے کہا کہ انہیں اندازہ ہے کہ آسٹریلیا میں کس طرح کی وکٹ ملے گی اور اس حساب سے ہی تیاریاں بھی کی ہیں، اچھی بات یہ ہے کہ قائد اعظم ٹرافی کے میچز ہورہے تھے اور تمام کھلاڑی اچھی پریکٹس میں ہیں۔ پچھلی بار پاکستانی بیٹنگ نے اچھا پرفارم کیا تھا لیکن باﺅلرز توقعات کے مطابق نہیں پرفارم کرسکے، کوشش کریں گے کہ پچھلے دورے میں جو غلطیاں کی تھیں، اس سے سبق سیکھیں اور اس بار بہتر پرفارمنس دینے کی کوشش کریں، کھلاڑی آسٹریلیا کے دورے کی تاریخ بدلنے کا عزم لے کر میدان میں اتریں گے۔

ایک سوال پر اسد شفیق کا کہنا تھا کہ ان کا ہدف یہی ہے کہ وہ ٹیم کی طرف سے زیادہ سکور کریں، بطور سینئر بلے باز مصباح اور یونس خان کے بعد ان پر ذمہ داریاں بڑھ گئی ہیں کہ میں لمبا کھیلوں اور زیادہ سے زیادہ رنز سکور کروں۔مصباح اور یونس کے بعد بوجھ تو نہیں بڑھا البتہ ذمہ داریاں ضرور بڑھ گئی ہیں کیونکہ جب وہ ہوتے تھے تو ذہنی سکون ہوتا تھا کہ دو تجربہ کار بلے باز ایسے موجود ہیں جو کسی بھی صورتحال میں ڈٹ سکتے تھے اور نوجوانوں کیلئے مددگار بھی ثابت ہوتے تھے اور اب یہی کرنا ہے کہ جو کچھ ان دونوں سے سیکھا، اس پر عمل کریں۔

مزید : کھیل