پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان پالیسی مذاکرات کا آغاز ہو گیا

پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان پالیسی مذاکرات کا آغاز ہو گیا
پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان پالیسی مذاکرات کا آغاز ہو گیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان اور انٹرنیشنل مانیٹرنگ فنڈ (آئی ایم ایف) کے درمیان پالیسی مذاکرات کا آغاز ہو گیا ہے جس میں آئندہ تین ماہ کے معاشی اہداف کا جائزہ لیا جائے گا جبکہ خسارہ کم کرنے کیلئے اقدامات اور نجکاری پروگرام سے بھی آئی ایم ایف کو آگاہ کیا جائے گا۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کو جولائی تا ستمبر کی ٹیکس وصولیوں اور اکتوبر تا دسمبر کیلئے اہداف پر بریفنگ دی جائے گی۔ ایف بی آر کو پہلی سہ ماہی میں 108 ارب روپے خسارے کا سامنا ہے جسے کم کرنے کیلئے اقدامات اور نجکاری پروگرام سے متعلق بھی آئی ایم ایف کو آگاہ کیا جائے گا۔

مذاکرات کی کامیابی کی صورت میں پاکستان کو 46 کروڑ ڈالر قرض کی نئی قسط جاری کی جائے گی۔ پالیسی مذاکرات میں پاکستانی وفد کی قیادت مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ جبکہ آئی ایم ایف وفد کی قیادت مشن ہیڈ ارنستو رمیزو رنگو کر رہے ہیں۔ سیکرٹری خزانہ، گورنر سٹیٹ بینک اور چیئرمین ایف بی آر بھی پاکستانی وفد کاحصہ ہیں۔

مزید : قومی