شراب پی کر ڈرائیور کے ساتھ بیٹھنے والی خاتون پر ڈرائیونگ پر پابندی لگادی گئی؟ لیکن کیوں؟ انتہائی حیران کن خبر آگئی

شراب پی کر ڈرائیور کے ساتھ بیٹھنے والی خاتون پر ڈرائیونگ پر پابندی لگادی ...
شراب پی کر ڈرائیور کے ساتھ بیٹھنے والی خاتون پر ڈرائیونگ پر پابندی لگادی گئی؟ لیکن کیوں؟ انتہائی حیران کن خبر آگئی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) شراب کے نشے میں دھت ہو کر گاڑی چلانا یقینا جرم ہے اور ایسے شخص کا لائسنس بھی کینسل ہو سکتا ہے لیکن گزشتہ دنوں برطانیہ میں پولیس نے ایک خاتون کے گاڑی چلانے پر پابندی عائد کر دی ، جو شراب کے نشے میں تھی مگر پیسنجر سیٹ پر بیٹھی ہوئی تھی۔ میل آن لائن کے مطابق اس 33سالہ ڈینا فریمین نامی خاتون نے بار میں شراب پی اور پھر آرٹر ویٹولز نامی شخص کو فون کرکے پک کرنے کو کہہ دیا۔

آرٹر اسے گھر لیجا رہا تھا کہ راستے میں پولیس نے روک لیا۔ انہوں نے جب آرٹر کا لائسنس چیک کیا تو وہ پروویژنل لائسنس تھا، یعنی آرٹر ابھی لرننگ پراسیس میں تھا۔ چنانچہ پولیس کا موقف ہے کہ جب ایک لرنر ڈرائیور گاڑی چلا رہا ہو تو پیسنجر سیٹ پر بیٹھا شخص درحقیقت گاڑی کا انچارج ڈرائیور ہوتا ہے اور اس پر بھی لازم ہے کہ وہ ڈرائیونگ کے تمام ضابطے پورے کرے۔ ڈینا نے چونکہ اس وقت شراب پی رکھی تھی چنانچہ پولیس نے شراب پی کر ’ڈرائیونگ کرنے‘ کے جرم میں اسے نہ صرف 1ہزار پاﺅنڈ کا جرمانہ کر دیا بلکہ اس کے تین ماہ تک گاڑی چلانے پر بھی پابندی عائد کر دی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس