بچے پیدا کرنے کے خواہشمند میاں بیوی کو 8 سال تک ناکامی، پھر ایک تبدیلی سے 13 ماہ میں 2 بچوں کی پیدائش ہوگئی

بچے پیدا کرنے کے خواہشمند میاں بیوی کو 8 سال تک ناکامی، پھر ایک تبدیلی سے 13 ...
بچے پیدا کرنے کے خواہشمند میاں بیوی کو 8 سال تک ناکامی، پھر ایک تبدیلی سے 13 ماہ میں 2 بچوں کی پیدائش ہوگئی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) موٹاپے سے نجات جان جوکھوں کا کام ہے لیکن برطانیہ میں موٹاپے کے شکار ایک میاں بیوی نے اولاد کی خواہش میں اپنا وزن 114کلوگرام تک کم کرکے دنیا کو حیران کر دیا۔ دی مرر کے مطابق برطانوی شہر کروئیڈن کے اس جوڑے ایمرا اور ایونی پیرو کے دو بچے تھے جن کی عمریں اس وقت 11اور 9سال ہیں۔ تاہم وہ شروع سے چاہتے تھے کہ ان کے چار بچے ہوں مگر دوسرے بچے کی پیدائش کے بعد انہیں اولا کے حصول میں شدید مشکلات کا سامنا رہا اور8سال سخت کوشش کے باوجود ان کے ہاں اولاد نہ ہو سکی۔

رپورٹ کے مطابق 2017ءمیں دونوں میاں بیوی نے کیمبرج ویٹ پلان میں شمولیت اختیار کی اور کچھ ہی عرصے میں ایمرا نے 38کلوگرام اور ایونی نے 76کلوگرام وزن کم کر لیا۔ 39سالہ ایمرا کا کہنا تھا کہ ”وزن کم کرنے کے تین ماہ بعد ہی ایونی حاملہ ہو گئی اور ہمارے ہاں ایک بیٹی پیدا ہوئی۔ اگلے ایک سال بعد ہمارے ہاں ایک اور بیٹی کی پیدائش ہوئی اور ہماری چار بچوں کی خواہش پوری ہو گئی۔موٹاپے کے دنوں میں ہم نے اولاد کے حصول کے لیے بہت کوشش کی لیکن ناکام ہوئے۔ ہم بالکل مایوس ہو گئے تھے مگر پھر ڈاکٹر کے مشورے سے ہم نے وزن کم کرنے کا فیصلہ کیا۔اس ڈائٹ پلان میں ہم ’لو کاربوہائیڈریٹ ڈائٹ‘ لیتے رہے جس سے بہت تیزی کے ساتھ ہمارا وزن کم ہوا۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس