کراچی، بلدیاتی الیکشن ،9نومبر کو سماعت 

کراچی، بلدیاتی الیکشن ،9نومبر کو سماعت 

  

اسلام آباد(آن لائن )الیکشن کمیشن آف پاکستان نے کراچی میں بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے 9نومبر کو سماعت کرنے کا فیصلہ کیا ہے سماعت میں جماعت اسلامی اور تحریک انصاف سمیت دیگر سیاسی جماعتوں کو بھی اپنا موقف پیش کرنے کے حوالے سے شرکت کی دعوت دی گئی ہے الیکشن کمیشن کا اہم اجلاس چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی سربراہی میں ہوا۔ اجلا س میں ممبران الیکشن کمیشن کے علاوہ سیکرٹری الیکشن کمیشن اور سپیشل سیکرٹری الیکشن کمیشن نے شرکت کی اجلاس میں الیکشن کمیشن کو کراچی میں بلدیاتی انتخابا ت کےانعقاد کے حوالے سے صوبائی حکومت کی رپورٹ پر بریف کیا گیاکہ صوبائی حکومت سندھ نے اپنی رپورٹ میں تحریر کیا ہے کہ بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کے لئے پولیس کی نفری ناکافی ہے اور سندھ کے دوسرے اضلاع سے منگوانا ممکن نہیں ہے مزید پولیس اہلکاران وزارت داخلہ کی درخواست پر اسلام آباد بھجوائے گئے ہیں۔ اسکے علاوہ کووڈ ویکسی نیشن اور انٹرنیشنل دفاعی نمائش / سمینا ر میں ان کی تعیناتی ضروری ہے۔ لہذا کراچی میں بلدیاتی انتخابات کا پ±رامن انعقاد ناممکن ہے۔ مزید دائریکٹر جنر ل ایکسپورٹ پروموشن آرگنائزیشن نے ایک چٹھی وزارت دفاع کو لکھی ہے کہ انٹرنیشنل دفاعی نمائش کراچی ایکسپوسنٹر میں منعقد ہو رہا ہے۔ جس کی کاپی الیکشن کمیشن آف پاکستان کو بھیجی گئی ہے۔ ڈائریکٹر جنرل نے وزارت دفاع کو مطلع کیا ہے کہ دفاعی نمائش ،سیمیناراور کراچی کے بلدیاتی انتخابات کو ایک ساتھ سکیورٹی مہیا کرنا قانون نافذ کرنے والےاداروں کےلئے مشکل ہوگا۔ اس لئے الیکشن کمیشن کو اس بابت سے بھی مطلع کیا جائے الیکشن کمیشن نے جماعت اسلامی کی طرف سے فوری انتخابات کے انعقاد کی چٹھی پر بھی غور کیا اور فیصلہ کیا کہ لوکل گورنمنٹ انتخابات کا کیس الیکشن کمیشن میں سماعت کے لئے مورخہ 9 نومبر 2022 کو مقرر کیا جائے جس میں سیکرٹری داخلہ ، چیف سیکرٹری اور آئی جی سندھ کو نوٹس جاری کئے جائیں۔ مزید جماعت اسلامی پاکستان ، پاکستان تحریک انصاف ، پیپلزپارٹی اور ایم کیوا یم پاکستان کو بھی بلایا جائے گاتاکہ وہ اگر پنا موقف پیش کرنا چاہیں تو پیش کریں۔ 

الیکشن کمیشن 

مزید :

صفحہ اول -