670کلوگرام خالص ریشم سے تیار کیا جانے والابیت اللہ کا غلاف تبدیل

670کلوگرام خالص ریشم سے تیار کیا جانے والابیت اللہ کا غلاف تبدیل

  

 مکہ مکرمہ (ڈویلپمنٹ سیل) دو کروڑ ریال کی لاگت سے670کلوگرام خالص ریشم سے تیار کیا جانے والابیت اللہ کا غلاف جمعہ کو تبدیل کردیا گیا - غلاف کعبہ کی تبدیلی کی روح پرور تقریب ہوئی جس میں غلاف کعبہ کو امام کعبہ شیخ عبدالرحمان السدیس نے مسجد الحرام کے کلید بردار شیخ عبدالقادرالشیبی کے حوالے کیا۔ا س سلسلے میںکام نماز فجر کے بعد شروع ہواجو تقریبا چار گھنٹے جاری رہا - پہلے نئے غلاف کو پرانے غلاف کے اوپر لٹکایا گیاپھر پرانے غلاف کی رسیاں ڈھیلی کر کے اسے نئے غلاف کے نیچے سے اتار اگیا -نیا غلاف دو کروڑ ریال کی لاگت سے670کلوگرام خالص ریشم سے تیار کیا گیا - غلاف کی تیاری میں 150کلو گرام خالص سونا اور چاندی بھی استعمال کی گئی اور اس پر بیت اللہ کی حرمت اور حج کی فرضیت اور فضیلت کے بارے میں قرآنی آیات کشیدہ کی گئی ہےں-اس کا سائز658مربع میٹر ہے اور یہ 47حصوں پر مشتمل ہوتا ہے -ہر حصہ14میٹر طویل اور 95سینٹی میٹر چوڑا ہوتا ہے- زمین سے تین میٹر کی بلندی پر نصب کعبہ کے دروازے کی لمبائی چھ میٹر او رچوڑائی تین میٹر ہے -غلاف کعبہ چار دیواروں کے علاوہ دروازے پر بھی آویزاں کیا جاتا ہے-اتارے جانے والے غلاف کے ٹکرے بیرونی ممالک سے آئے ہوئے سربراہان مملکت اور دیگر معززین کو بطور تحفہ پیش کر دئیے جاتے ہیں- یہ غلاف ہر سال 9 ذوالحجہ کو تبدیل کیا جاتا ہے جبکہ کعبہ کو غسل ہر سال دو مرتبہ شعبان اور ذوالحجہ کے مہینوں میں دیا جاتا ہے -مکہ مکرمہ کے قریب غلاف کعبہ تیار کرنے کی فیکٹری 78سال قبل قائم کی گئی تھی جہاں 200سے زائد ہنر مندمسلسل آٹھ ماہ کی محنت سے اسے تیار کرتے ہیں - 1962 میں غلاف کعبہ کی تیاری کی سعادت پاکستان کے حصے میں بھی آئی تھی۔

غلاف تبدیل

مزید :

صفحہ اول -