سماجی تنازعات کے جلد حل کے لیے انصاف کے متبادل نظام میں اصلاحات کی ضرورت ہے :نواز شریف

سماجی تنازعات کے جلد حل کے لیے انصاف کے متبادل نظام میں اصلاحات کی ضرورت ہے ...

  

اسلام آباد (آئی این پی) وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ سماجی تنازعات کے جلد حل کیلئے انصاف کے متبادل نظام میں اصلاحات کرنے کی ضرورت ہے، لوگ چھوٹے چھوٹے معاملات کے حل کیلئے دہائیوں تک عدالتوں میں دھکے کھاتے رہتے ہیں، متبادل نظام سے عدالتوں کو مزید تقویت ملے گی جبکہ عوام کو سستا انصاف دہلیز پر میسر ہو گا، متبادل نظام انصاف میں اہلیت، دانش اور اچھی شہرت کے حامل افراد کو آگے لانے کی ضرورت ہے جبکہ موجودہ عدالتی نظام کے اندرجدید ٹیکنالوجی کے زیادہ سے زیادہ استعمال کو فروغ دیا جائے، سپیکر قومی اسمبلی سے درخواست کرتے ہیں کہ متبادل نظام انصاف پر اتفاق رائے کیلئے پارلیمانی کمیٹی تشکیل دیں۔ وہ جمعہ کو یہاں وزیر اعظم ہاؤس میں اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ اعلیٰ سطح کے اجلاس میں وزیر اعظم نواز شریف کو متبادل نظام انصاف کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی جس میں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات پرویز رشید، وفاقی وزیر منصوبہ بندی، ترقی و مواصلات احسن اقبال، وزیر اعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر مصدق ملک اور سیکرٹری قانون ظف اللہ خان شریک تھے۔ اس موقع پر وزیر اعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ متبادل نظام انصاف سے موجودہ عدالتی نظام کو مزید تقویت اور ریلیف ملے گا کیونکہ اس سے عدالتوں میں ناقابل حل تنازعات کے خاتمے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ انصاف کے متبادل نظام میں اصلاحات کی ضرورت ہے تا کہ عام آدمی کو مہنگے نظام انصاف سے نجات ملے جبکہ اس سے عدالتوں پر مقدمات کا بوجھ بھی کم ہو گا اس بات کی اشد ضرورت ہے کہ تنازعات کا جلد سے جلد حل نکلے جبکہ اس کیلئے موجودہ عدالتی نظام کو جدید ٹیکنالوجی سے لیس کرنے کی ضرورت ہے بالخصوص تفتیش کے عمل میں ٹیکنالوجی سے مدد لیناضروری ہے۔ وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ ایک ایسا متبادل نظام انصاف تشکیل دیا جائے جو عام آدمی کے مسائل ان کی دہلیز پر حل کرے جبکہ یہاں لوگ چھوٹے چھوٹے سماجی تنازعات کے حل کیلئے دہائیوں تک عدالتوں کے چکر کاٹتے رہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خیبرپختونخوا اور قبائلی علاقوں میں جرگہ سسٹم سماجی تنازعات کے حل کی بہترین مثال ہے،لہٰذا متبادل نظام انصاف میں گاؤں، دیہات کی سطح پر قابل، دانشمند اور اچھی شہرت کے حامل افراد کو آگے لایا جائے۔ وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ متبادل نظام انصاف کے لئے فوری طور پر قانون کا مسودہ تیار کر کے اس پر قومی و صوبائی کانفرنسوں میں بحث کرائی جائے۔ مزید برآں انہوں نے کہا کہ ہم سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق سے درخواست کرتے ہیں کہ متبادل نظام انصاف کے قانون پر اتفاق رائے پیدا پارلیمانی کمیٹی تشکیل دیں

مزید :

صفحہ اول -