انقلابی جدوجہد جاری رہے گی ،کوئی یہ نہ سمجھے ہم پیچھے ہٹ جائیں گے ،طاہر القادری

انقلابی جدوجہد جاری رہے گی ،کوئی یہ نہ سمجھے ہم پیچھے ہٹ جائیں گے ،طاہر ...

  

                   اسلام آباد( اے این این ) پاکستان عوامی تحریک کے قائد ڈاکٹر محمدطاہر القادری نے کہا ہے کہ انقلابی جدوجہد ہر صورت جاری رہے گی ¾ کوئی یہ نہ سمجھے ہم پیچھے ہٹ جائیں گے ¾ اب ہمارا ہر دن دھرنے کا ہوگا ¾جب دھرنا ختم کرنا ہوا خود ہی اعلان کردونگا کسی کے مشورے کی ضرورت نہیں ¾ محنت کوئی کرے اور فصل کوئی اور لے جائے یہ اب نہیں ہوگا ¾ کسی کےلئے میدان کھلا نہیں چھوڑیں گے ¾ غریب جو فصل بوئے گا اسے خود بھی کھائے گا اور محنت کا صلہ بھی پائے گا ۔ جمعہ کو یہاں دھرنے کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ انتخابات میں حصہ لینے کے اعلان کے بعد آپ کا ثواب دوگنا ہوگےاہے اب ہمارے کندھوں پر بوجھ دوگنا ہوگیاہے۔جب سے ہم نے انتخابی سیاست سے کنارہ کشی اختیارکی تھی ہمارے اوپر ایک ذمہ داری تھی انقلابی جہدوجہد کی اس نظام کے خلاف یہ ایک جنگ تھی ایک جہاد تھا اب انقلابی جدوجہد ہماری برقرارہے وہ ہمارا ایمان ہے وہ ہم ایک دن کیلئے بھی ترک نہیں کرسکتے انقلاب کی جدوجہد ہمارے لئے جینا مرناہے ۔یہ انقلابی جدوجہد جاری رہے گی اب یہ طویل جدوجہد ہوگئی ہے ہم انقلاب سے کبھی دستبردارہوئے نہ ہوسکتے ہیں نہ کبھی ہوں گے ۔اب ہماراہردن دھرنے کی طرح کا دن ہوگا۔دھرنہ ختم کرنے کا دن ہمارااپنا فیصلہ ہوگا ہم جو بھی فیصلہ کریں اس پر کارکنوں کااختےار ہے کسی کو ہمیں ڈکٹیت کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔اب اگلی زندگی میں جتنا وقت ملے ہردن دھرنے کی طرح کاہوگاہردن دھرنے کا ہوگا۔ شکل مختلف ہوگی مگر دھرنا جس مقصدکیلئے کیا ہم شہید توہوسکتے ہیں پیچھے ہٹ نہیں سکتے۔ان خیالات کااظہار انہوںنے خطاب جمعہ کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔ڈاکٹر طاہرالقادری نے کہا کہ آپ ﷺ نے حج فرض ہونے بعد زندگی میں صرف ایک بار حج کیا اور جو ایک حج کیا وہ بھی فریضہ اداکرنے کیلئے کیا۔آپ ﷺکی حیات کی دائمی جدوجہد امت اورانسانیت کی فلاح کیلئے تھی سو آپ آقاﷺ کی اس دائمی سنت پر عمل کررہے ہیں حج کا دن سال میں ایک بار آتاہے اورحج کی سعادت بھی اللہ نے سال میں ایک بار ہی فرض کی۔حج کے عمرمیں ایک بارفرض ہے، لیکن ایسے کئی اعمال بیان کیئے جو انسانی خدمت کے اعمال ہیں ظلم کے خلاف آواز بلندکرنے کے اعمال ہیں کئی اعمال ایسے بیان کئے کہ ان کی انجام دہی سے ا یسے ہے کہ آپ نے ساری عمر حج کیا۔کسی عمل کیلئے دس سال کسی عمل کیلئے بیس سال اور کسی عمل پر فرمایا کہ عمر بھر نفلی حج کا اجر ہے۔آپ ایک ایسے عمل میں مصرف ہیں جس پر اللہ کریم آپ کو نفلی حج کاثواب دے رہاہے۔ہم نے جس جنگ کا آغازکیا ہے اب یہ ختم نہیں ہوسکتی ۔اب دھرنا50,60دن کا نہیں ہوگا یہ دھرنا تحریک ہوگا۔انقلاب کا ایجنڈاہم ختم نہیں کرسکتے دوست دشمن سامنے پیچھے والے سب جان لیں ہم مرسکتے ہیں مگرانقلاب کے ایجنڈے سے پیچھے نہیں ہٹ سکتے صرف حالات کے پیش نظر سپین لمبا ہوگیامگر آقا علیہ الصلوة نے غزوہ بدربھی کیا،غزوہ اہدبھی آیا زخم بھی آیا مگر مصطفیﷺ کے قدم بڑھتے رہے بلآخر فتح مکہ آیا۔یہ انقلاب ایک ایسا سفر ہے کہ اب سنت مصطفی پر عمل کرتے ہوئے ہماراہرروز دھرنہ ہوگا ہرروز قدم بڑھتے رہیں گے کوئی بھول کہ بھی نہ سوچے ہمارے قدم پیچھے جائیں گے آگے ہی آگے جائیںگے۔انقلاب کی جدوجہد جاری رہے گی کوئی یہ نہ سمجھے کہ انتخابی ج ماعت بنانے کے بعد انقلاب سے پیچھے ہٹیںگے

مزید :

صفحہ آخر -