حمل روکنے کے لئے نوجون لڑکی کاآلو کاشرمناک استعمال

حمل روکنے کے لئے نوجون لڑکی کاآلو کاشرمناک استعمال
حمل روکنے کے لئے نوجون لڑکی کاآلو کاشرمناک استعمال

  

سان فرانسسکو (نیوز ڈیسک) ترقی یافتہ دور جدید میں مانع حمل گولیاں اور انجکشن عام استعمال ہونے لگے ہیں لیکن ابھی بھی روایتی طریقے بڑے پیمانے پر استعمال ہوتے ہیں۔ امریکہ میں بھی ایک خاتون نے اپنی 22 سالہ بیٹی کو جدید گولیوں اور انجکشن سے بچانے کیلئے ایک انتہائی مختلف طریقہ تجویز کیا لیکن اس کا نتیجہ ناقابل یقین برآمد ہوا۔

مسوڑھوں میں درد،خون سے نجات کے آسان گھریلو نسخے

لڑکی کی ماں نے اسے سمجھایا کہ حمل سے بچنے کیلئے وہ چھوٹے سائز کا ایک آلو جسم میں داخل کرلے اور بیٹی نے اس ہدایت پر عمل بھی کرلیا۔ چند دن بعد اچانک اسے پیٹ میں درد کی شکایت پیدا ہوئی تو وہ ڈاکٹر کے پاس گئی۔ جب ایک نرس نے اس کا معائنہ کیا تو یہ دیکھ کر ششدر رہ گئی کہ آلو نے پھوٹنا شروع کردیا تھا اور اس کی جڑیں پھیل رہی تھیں۔ فوری طور پر ڈاکٹروں نے انتہائی احتیاط کے ساتھ آلو کو جسم سے نکالنے کا کام مکمل کیا۔

ختنوں کا انسانی صحت کیلئے حیرت انگیز فائدہ ، سائنس نے بھی تسلیم کرلیا

لڑکی کا کہنا ہے کہ اب اس کا درد بھی ختم ہوچکا ہے اور وہ بہتر محسوس کررہی ہے جبکہ ڈاکٹروں نے بتایا کہ اب اس کو مزید کوئی خطرہ نہیں ہے۔ تاہم انہوں نے بیٹی کی جان کو خطرے میں ڈالنے پر ماں کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -