خوبصورت دوشیزہ کے ساتھ حسد کی ماری سہیلیوں کا بدترین سلوک

خوبصورت دوشیزہ کے ساتھ حسد کی ماری سہیلیوں کا بدترین سلوک
خوبصورت دوشیزہ کے ساتھ حسد کی ماری سہیلیوں کا بدترین سلوک

  

بیونس آئرس (نیوز ڈیسک) خوبصورت شکل قدرت کی عطا کردہ بہت بڑی نعمت ہے اور خوبصورت لوگ اپنی اس خوبی کی بنا پر بہت پسند کئے جاتے ہیں۔ لیکن بعض اوقات حسد کرنے والے اپنی نفرت کی وجہ سے خوبصورت شکل کو مجروح کرکے ایک بھیانک صورت دے دیتے ہیں۔

ارجنٹینا میں بھی ایک 15 سالہ لڑکی جولیا الوارز کے خوبصورت چہرے کو حسد کرنے والی سہیلیوں نے عمر بھر کے لئے بگاڑ کر رکھ دیا ہے۔ جولیا دوستوں سے ملنے کے بعد پیدل گھر واپس جارہی تھی کہ راستے میں 16 اور 18 سالہ دو لڑکیوں نے اس پر حملہ کردیا، حملہ آور لڑکیاں مسلسل چلا رہیں تھیں کہ سب تمہیں پیاری صورت والی کہتے ہیں اور ہم تمہاری صورت کو اس قدر بگاڑ دیں گی کہ ساری عمر کوئی تمہیں دیکھنا پسند نہیں کرے گا۔ ان لڑکیوں نے جولیا پر تشدد کرنے کے بعد چاقو نکال لئے اور اس کے چہرے، بازوﺅں اور کمر پر گہرے زخم لگائے۔ اس کی چیخ و پکار کی وجہ سے حملہ آور لڑکیاں فرار ہوگئیں اور کچھ راہگیروں نے شدید زخمی لڑکی کو ایک ایمبولینس کے ذریعے ہسپتال پہنچایا۔ ڈاکٹروں نے جولیا کے شدید زخموں کو ٹانکے لگائے، کچھ زخم تو اتنے بڑے تھے کہ انہیں 20 ٹانکے لگانے پڑے۔

جولیا کی بہن یینی کا کہنا ہے کہ اس کی بہن کی پیاری صورت کی وجہ سے اکثر لڑکیاں اس سے حسد کرتی تھیں لیکن حملہ کرنے والیں دو لڑکیاں جو کہ آپس میں بہنیں ہیں اس سے خصوصی طور پر عداوت رکھتی تھیں۔ اس کا یہ بھی کہنا ہے کہ وہ جب بھی اپنی چھوٹی بہن کا چہرہ دیکھتی ہے تو اسے رونا آجاتا ہے کیونکہ وہ بہت ہی خوبصورت لڑکی تھی لیکن اب اس کے چہرے کو عمر بھر کے لئے بدنما بنادیا گیا ہے۔

مزید :

انسانی حقوق -