گاڑی کی سیٹ بتائے گی پسینہ بہنے سے جسم میں پانی کی کتنی کمی ہوچکی ہے

گاڑی کی سیٹ بتائے گی پسینہ بہنے سے جسم میں پانی کی کتنی کمی ہوچکی ہے
 گاڑی کی سیٹ بتائے گی پسینہ بہنے سے جسم میں پانی کی کتنی کمی ہوچکی ہے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)گاڑیاں بنانے والی جاپانی کمپنی نسان نے گاڑیوں میں نئی ٹیکنالوجی متعارف کرائی ہے جس سے سیٹ میں لگے سنسر ڈرائیور کے جسم سے پسینے کے اخراج سے پانی کی کمی کو محسوس کر سکیں گے جس سے ملنے والی معلومات کی مدد سے حادثات میں کمی آئے گی۔'سوک' نامی ٹیکنالوجی ڈرائیور کا پسینہ جذب کرتی ہے اور اگر اس میں نمک کی مقدار زیادہ ہو تو وہ جسم میں پانی کی کمی کی نشاندہی کرتی ہے۔ لیکن نسان کمپنی کا اس ٹیکنالوجی کو فوراً گاڑیوں میں لگانے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔واضح رہے کہ یورپین ہائڈریشن انسٹٹیوٹ اور لوبرو یونی ورسٹی کی جانب سے کی جانی والی تحقیق کے مطابق وہ ڈرائیور جن کے جسم میں پانی کی کمی ہوتی ہے ان کے حادثات میں ملوث ہونے کے زیادہ امکانات ہوتے ہیں کیونکہ انھوں نے شراب نوشی کر رکھی ہوتی ہے۔یہ ٹیکنالوجی ہالینڈ کی کمپنی نے ڈیزائن کی ہے جسے گاڑیوں کی سیٹ اور سٹیئرنگ وہیل پر لگایا جا سکتا ہے اور پانی میں کمی کی صورت اس کا رنگ نیلے سے تبدیل ہو کر پیلا ہو جاتا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4